حنا ربانی کی چینی حکام سے ملاقاتیں....پاکستان چین کا معاشی دفاعی اور تجارتی شعبوں میں تعاون کو فروغ دینے پر اتفاق

25 اگست 2011
بیجنگ (اے ایف پی + آن لائن) پاکستان اور چین نے اقتصادی اور دفاع سمیت تمام شعبوں میں باہمی تعاون کو مزید فروغ دینے پر اتفاق کیا ہے، وزیر خارجہ حنا ربانی کھر نے چین میں وزیراعظم وین جیاباﺅ اور اپنے ہم منصب یانگ یی چی سے الگ الگ ملاقات کی۔ بیجنگ میں پاکستان اور چین کی وزارت خارجہ کے درمیان ہونے والے مذاکرات میں پاکستانی وفد کی قیادت وزیر خارجہ حنا ربانی کھر جبکہ چین کے وفد کی سربراہی وزیر خارجہ یانگ یی زی نے کی، مذاکرات میں تمام شعبوں میں تعلقات اور اقتصادی شعبے میں تعاون بڑھانے پر بات چیت کی گئی، دونوں ملکوں کے درمیان اقتصادی شعبوں میں تعاون بڑھانے کے لئے مختلف منصوبوں اور تعاون کو بڑھانے پر بھی غور کیا گیا‘ علاوہ ازیں وزیر خارجہ حنا ربانی کھر نے بیجنگ میں چین کے وزیر اعظم وین جیاباﺅ سے ملاقات کی اور انہیں صدر زرداری اور وزیر اعظم گیلانی کی جانب سے نیک خواہشات کا پیغام پہنچایا، چینی وزیر اعظم نے وزیر خارجہ سے گفتگو میں کہا کہ حنا ربانی کھر کا چین کا دورہ دونوں ملکوں کے دیرینہ اور قریبی تعلقات کا عکاس ہے اور پاکستان کے صدر کا متوقع دورہ چین سے دونوں ملکوں کے تعلقات کو مزید فروغ ملے گا، حنا ربانی کھر نے مذاکرات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ دونوں ملکوں کے درمیان ہر شعبے میں مضبوط رابطے قائم ہیں اور پاکستان ان تعلقات کو مزید مستحکم کرنا چاہتا ہے پاکستان چین کے ساتھ اپنے دفاعی تعلقات کو بھی مزید مستحکم کرنا چاہتا ہے۔ وزیر خارجہ نے چین پر زور دیا کہ دہشتگردی کے خلاف مشترکہ کوششوں میں اضافہ کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ کاشفر میں حالیہ واقعات کی مذمت کرتے ہیں اس طرح کے واقعات سے پاکستان اور چین کے تعلقات پر اثر نہیں پڑ سکتا بھارت سمیت تمام ہمسایہ ممالک کے ساتھ بہتر تعلقات چاہتے ہیں۔ مستحکم افغانستان پاکستان کے مفاد میں ہے‘ دہشت گردی کیخلاف مشترکہ کوششوں میں اضافہ کیا جائے۔ریڈیو مانیٹرنگ کے مطابق حنا ربانی نے کہا کہ پاکستان کی جانب سے چین کو امریکی ہیلی کاپٹر تک رسائی کی خبریں بے بنیاد ہیں۔
پاکستان چین تعلقات