برطانوی اخبار نے دعویٰ کیا ہے کہ روس میں چند روز قبل طیارے کےحادثے میں ہلاک ہونے والے پانچ روسی سائنسدان ایران کو جوہری راز فراہم کررہے تھے۔

24 جون 2011 (16:56)
برطانوی اخبار نے دعویٰ کیا ہے کہ روس میں چند روز قبل طیارے کےحادثے میں ہلاک ہونے والے پانچ روسی سائنسدان ایران کو جوہری راز فراہم کررہے تھے۔
برطانوی اخبار ڈیلی میل کی رپورٹ کے مطابق منگل کو ٹی یو ون تھرٹی فور طیارے کو پیش آنے والے حادثے میں ہلاک پینتالیس افراد میں روس کے پانچ سائنسدان بھی شامل ہیں۔ بظاہر دھند اور فنی خرابی کے سبب پیش آنے والے اس حادثے میں سازش کے عنصر کو نظر انداز نہیں کیا جاسکتا۔ اخبار کے مطابق ہلاک ہونے والے سائنسدان ایران کے متنازعہ بوشہر نیوکلئیر پلانٹ میں کام کرتے رہے جبکہ ان سائنسدانوں میں ایٹمی ٹیکنالوجی کے ماہر اینڈرے ٹوکینوو کو روس اور ایران کی جوہری صنعت میں نمایاں مقام حاصل رہا۔ دیگرسائنسدان نیکولے،ٹرنوو، جینیڈی اور ویلری بھی بوشہر پلانٹ سے ملحقہ ہائیڈروپریس کمپنی سے منسلک رہ چکے ہیں۔ یہ سائنسدان ایک کانفرنس میں شرکت کے لیے ماسکو سے روس کے شمال مغربی علاقے پیٹرزیوڈسک جارہے تھے۔