پاکستان سپر لیگ: دوسرے ایڈیشن کے لئے کھلاڑیوں کی ڈرافٹنگ آج ہو گی

19 اکتوبر 2016

لاہور (سپورٹس رپورٹر+ نمائندہ سپورٹس) پاکستان سپر لیگ کے دوسرے ایڈیشن کیلئے پلیئرز ڈرافٹنگ کی تقریب آج دبئی میں شام پانچ بجے ہوگی۔ 414 کھلاڑیوں پر مشتمل پلیئرز ڈرافٹنگ میں پانچ کیٹیگریز شامل ہیں۔ پلاٹینم کیٹیگری میں 74 سلور میں 255 اور ایمرجنگ میں 24 ملکی و غیر ملکی کرکٹر شامل ہیں جبکہ پلاٹینم میں 9 پاکستانی پلیئرز سمیت دنیائے کرکٹ کے 19 کرکٹرز شامل ہیں ۔ آسٹریلیا کے شین واٹسن‘ بنگلہ دیش کے شکیب الحسن‘ انگلینڈ کے الیکس ہیلز‘ ایون مورگن ‘جیسن روئے‘ کیون پیٹرسن‘ سٹیورٹ براڈ، نیوزی لینڈ کے برینڈن میکولم‘ سری لنکا کے کمارا سنگا کارا‘ لیستھ مالنگا‘ مہیلا جے وردنے، ویسٹ انڈیز کے آندرے رسل‘ کرس گیل‘ ڈیرن سیمی‘ ڈوائن براوو‘ ڈیوائن سمتھ‘ کیرون پولارڈ‘ مارلن سموئلز اور سنیل نارائن شامل ہیں جبکہ پاکستانی کھلاڑیوں میں احمد شہزاد‘ مصباح الحق‘ محمد حفیظ‘ سرفراز احمد‘ شاہد آفریدی‘ شعیب ملک‘عمر اکمل‘ وہاب ریاض اور یونس خان شامل ہیں۔ پول میں زمبابوے کے 10 کھلاڑی بھی شامل ہیں جبکہ ٹیسٹ کرکٹ نہ کھیلنے والے ممالک کے کرکٹرز کو بھی پلیئرز ڈرافٹنگ میں شامل کیا گیا ہے جن میں افغانستان‘ کینیڈا‘ اومان‘ متحدہ عرب امارات اور امریکا کا بھی ایک ایک کھلاڑی اس عمل کا حصہ ہو گا۔ پاکستان سپر لیگ کا حصہ بننے والے پلیئرز کو ایک لاکھ ڈالرز سے لے کر اڑھائی لاکھ ڈالرز تک معاوضہ دیا جائے گا ۔ نجم سیٹھی کا کہنا ہے کہ پی ایس ایل کا فائنل پاکستان میں کرانے کی پوری کوشش کریں گے اور اس سلسلہ میں وزیر اعلی پنجاب محمد شہباز شریف سے بھی بات ہوچکی ہے جبکہ پی ایس ایل کھیلنے والے غیر ملکی کھلاڑیوں کو جو فارم دیئے گئے ہیں اس میں یہ شرط واضح ہے کہ اگر ان کھلاڑیوں کی ٹیم فائنل میں پہنچی تو انہیں لاہور آکر فائنل کھیلنا پڑے گا اور کئی غیر ملکی کھلاڑیوں نے اس پر دستخط بھی کر دیئے ہیں۔ پاکستان سپر لیگ اگلے ماہ سے پی ایس ایل الگ کمپنی ہوگی اور ڈائریکٹرز کی اکثریت پاکستان کرکٹ بورڈ سے باہر سے ہوں گے کیونکہ ہم پی ایس ایل کو پی سی بی کی سیاست سے الگ رکھنا چاہتے ہیں۔ڈائریکٹرز کے انتخاب کے حوالے سے چیئرمین پی ایس ایل نے کہا کہ نجی شعبے سے تعلق رکھنے والی شخصیات کی حوصلہ افزائی کی جائے گی۔نجم سیٹھی نے اعلان کیا کہ وہ اگلے سال پی ایس ایل کے چیئرمین نہیں رہیں گے اور باہر سے کوئی شخص پی ایس ایل کا سربراہ ہوگا۔