صدر اوباما کے دورہ سے قبل میانمار پر عائد متعدد امریکی پابندیاں اٹھا لی گئیں

18 نومبر 2012

واشنگٹن (آن لائن) امریکہ نے صدر باراک اومابا کے دورہ میانمار سے پہلے اس پر عائد متعدد امریکی درآمدی پابندیاں ہٹا لی ہیں۔ امریکی حکام کے مطابق اس بات کا مقصد میانمار میں ہونے والی سیاسی اصلاحات کی حمایت اور صنعت و تجارت میں نئے مواقعوں کو فروغ دینا ہے۔ واضح رہے کہ میانمار میں 2010ءمیں فوجی حکومت کے خاتمے کے بعد باراک اوباما میانمار کا دورہ کرنے والے پہلے امریکی صدر ہوں گے۔ امریکی صدر 17 سے 20 نومبر کے دوران میانمار کے علاوہ تھائی لینڈ اور کمبوڈیا کا بھی دورہ کریں گے۔ امریکی صدر میانمار کے صدر تھین سین اور حزب اختلاف کی رہنما آنگ سانگ سوچی سے بھی ملاقات کریں گے۔ باراک اوباما کے دوسری مدت کے لئے امریکی صدر منتخب ہونے کے بعد میانمار کے دورے پر جانے سے اندازہ ہوتا ہے کہ امریکہ میانمار کے سے تعلقات استوار کرنے میں کافی سنجیدہ ہے۔ وائٹ ہاو¿س کے ترجمان جے کارنے کے مطابق صدر اوباما میانمار میں سول سوسائٹی کے کارکنوں سے ملاقات کریں گے۔