سموگ : دیہات میں لوڈشیڈنگ 18 گھنٹے تک جاپہنچی، شہروں میں بُرا حال ، حادثات میں مزید 14 جاں بحق

07 نومبر 2017

ملتان (نامہ نگار خصوصی، نمائندہ خصوصی، کرائم رپورٹر، خبر نگار خصوصی، علاقائی نمائندوں سے) سموگ اور دھند سے جنوبی پنجاب میں بھی بجلی کی فراہمی بری طرح متاثر۔ مسلسل چھٹے روز بھی گرڈ اور فیڈرز کی بندش کا سلسلہ جاری، دھند کے باعث حادثات میں خاتون سمیت 2 افراد جاں بحق ہو گئے۔ ٹرینوں اور پروازوں کا شیڈول متاثر۔ ملتان سے نامہ نگار خصوصی کے مطابق شہر سمیت جنوبی پنجاب میں شدید دھند اور سموگ سے بجلی کی فراہمی بری طرح سے متاثر ہو رہی ہے۔ جنوبی پنجاب میں مسلسل چھٹے روز بھی گرڈ سٹیشنوں اور فیڈرز کی بندش کا سلسلہ جاری رہا۔ صارفین شدید پریشانی اور مسائل کا شکار رہے۔ موسمی تبدیلی سے ٹرانسمیشن لائنز سب سے زیادہ متاثر ہو رہی ہیں۔ ہائی ٹرانسمیشن لائنز اور انٹر سٹی ٹرانسمیشن لائنوں کی ٹرپنگ اور بریک ڈائون ترسیلی و تقسیمی نظام میں تعطل اور عدم فراہمی بڑا سبب بن گئی ہے۔ وہاڑی سے نامہ نگار کے مطابق گرڈ اسٹیشن واپڈا میں فنی خرابی، ضلع بھر میں بجلی کی سپلائی معطل، 14 گھنٹے سے مسلسل بجلی نہ ہونے کی وجہ سے گھروں، مساجد اور سکولوں تک میں پینے کا پانی نایاب ہو گیا، نلکوں پر رش لگ گیا۔ لوگ پانی کی بوند بوند کو ترس گئے۔ ملتان سے کرائم رپورٹر کے مطابق شدید دھند اور سموگ کے باعث نظام زندگی متاثر ہو کر رہ گیا ہے اور حد نگاہ صفر ہو گئی جس کے باعث مختلف علاقوں میں حادثات پیش آئے ہیں۔ گزشتہ شب ملتان، خانیوال موٹر وے ٹریفک کے لئے بند کر دیا گیا جبکہ بہاولپور بائی پاس پر دھند اور سموگ کے باعث بس نے سڑک کراس کرنے والی خاتون رحمت بی بی کو ٹکر مار دی جس کے نتیجے میں وہ موقع پر جاں بحق ہو گئی۔جلالپور پیر والہ سے نامہ نگار کے مطابق بہادر پور کے رہائشی فیصل اور طیب موٹر سائیکل پر جلالپور آ رہے تھے کہ بائی پاس کے قریب دھند کے باعث موٹر سائیکل ٹریکٹر کو ٹکرا کر نیچے گر گیا۔ جس سے دونوں شدید زخمی ہو گئے جنہیں فوری طور پر ہسپتال لے جایا گیا لیکن زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دونوں جاں بحق ہو گئے۔ملتان سے خبر نگار خصوصی کے مطابق شہر و گرد و نواح میں سموگ اور دھند پڑنے کا سلسلہ بدستور جاری ہے۔ محکمہ موسمیات کی پیش گوئی کے مطابق آج بھی سموگ اور دھند پڑنے کا امکان ہے۔ پیر کے روز ملتان میں درجہ حرارت زیادہ سے زیادہ 22.2 کم سے کم 16.8 بہاولپور زیادہ سے زیادہ 23.8 کم سے کم 15.9 رحیم یار خان زیادہ سے زیادہ 27.2 کم سے کم 14.2 خان پور زیادہ سے زیادہ 25.2 کم سے کم 14.5 بہاولنگر زیادہ سے زیادہ 27 کم سے کم 12 کوٹ ادو زیادہ سے زیادہ 21 کم سے کم 16.7 ڈی جی خان زیادہ سے زیادہ 23.4 کم سے کم 15.2 کروڑ لعل عیسن زیادہ سے زیادہ 20.4 کم سے کم 14.5 درجے سنٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا۔ اور گزشتہ روز شام ہوتے ہی دھند پڑنے کا بھی سلسلہ شروع ہو گیا۔ ملتان سے نمائندہ خصوصی کے مطابق دھند اور سوگ کے باعث مسافر ٹرینوں کی تاخیر سے آمد و رفت کا سلسلہ جاری ہے۔ تاخیر سے آنے والی گاڑیوں میں کراچی سے لاہور جانے والی کراچی ایکسپریس 9 گھنٹے‘ لاہور سے کراچی جانے والی کراچی ایکسپریس 9 گھنٹے‘ لاہور سے کراچی جانے والی شالیمار 6 گھنٹے‘ کراچی سے لاہور جانے والی شالیمار ٹو 6 گھنٹے‘ کراچی سے لاہور جانے والی شالیمار 7 گھنٹے‘ راولپنڈی سے ملتان آنے والی مہر 4 گھنٹے‘ کوئٹہ سے راولپنڈی جانے والی جعفر 4 گھنٹے‘ کراچی سے پشاور جانے والی خیبر میل 3 گھنٹے‘ کراچی سے راولپنڈی جانے والی تیزگام 4 گھنٹے 30 منٹ‘ لاہور سے ملتان آنے والی ملتان ایکسپریس 5 گھنٹے‘ پشاور سے کراچی جانے والی عوام ایکسپریس 3 گھنٹے‘ کراچی سے ملتان آنے والی زکریا 2 گھنٹے 30 منٹ کی تاخیر سے ملتان کینٹ سٹیشن پر پہنچیں۔ اسی طرح ملتان سے لاہور جانے والی موسیٰ پاک بھی 2 گھنٹے 45 منٹ کی تاخیر سے روانہ ہوئی۔ مسافر ریل گاڑیوں کی تاخیر کے باعث مسافروں اور ان کے عزیز و اقارب کو شدید پریشانی کا سامنا رہا۔

لاہور‘شیخوپورہ‘فیصل آباد‘میانوالی‘کشمور‘ دائود خیل‘ ٹوبہ ٹیک سنگھ (نامہ نگاران‘ایجنسیاں) لاہور سمیت پنجاب کے مختلف شہروں میں شدید دھند اور سموگ کا راج گزشتہ روز بھی برقرار رہا جس سے معمولات زندگی شدید متاثر ہو رہے ہیں ، حد نگاہ کم ہوجانے سے مختلف ٹریفک حادثات میں12افراد جاں بحق جبکہ طلباء طالبات سمیت 80سے زائد افراد زخمی ہوگئے۔موٹر وے کے مختلف سیکشن بند کر دیئے گئے۔ائیرپورٹس پر فلائٹ آپریشن بھی شدید متاثر ہو رہا ہے ،متعدد پروازیں منسوخ ہونے کے ساتھ تاخیر کا بھی شکار ہوئیں، محکمہ تحفظ ماحول پنجاب کی جانب سے آلودگی کے باعث بننے والے مزید 60کارخانوں کے خلاف ایف آئی آر درج کرا دی گئیں۔ تفصیلات کے مطابق پنجاب کے مختلف علاقوں میں صبح کے وقت شدید دھند اور سموگ نے لوگوں کی زندگی اجیرن کردی کام پر جانے میں شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔شاہ کوٹ میں سانگلہ روڈ پرگاڑی نے دھند کے باعث ایک شخص کوکچل دیا چوک سرورشہید روڈ پرسناواں موڑکے قریب کار بس سے ٹکرا گئی جس کے نتیجے میں 4افراد زخمی ہوگئے۔پنڈی بھٹیاں میں چنیوٹ روڈ پرکارنالے میں گرگئی، حادثے میں ایک شخص جاں بحق جبکہ 3افراد زخمی ہوگئے۔لاہورروڈ پردھند کے باعث ٹریفک حادثے میں 7افراد زخمی ہوگئے۔میانوالی میں سکول وین اور مرغیوں سے بھرے ٹرک میں تصادم سے 10طالبات زخمی ہوگئیں۔ کندھ کوٹ میں انڈس ہائی وے پر ٹرالر نے رکشہ کو ٹکر مار دی جس کے نتیجے میں 12 طلبہ زخمی ہوگئے جن میں سے 8کی حالت نازک بتائی جاتی ہے۔ ظفروال کے علاقے میں نجی کالج کی وین الٹ گئی جس کے باعث 12 طالبات زخمی ہوگئیں۔سموگ کی وجہ سے جی ٹی روڑ 6والا پھاٹک کے قریب کار اور ٹرک کے تصادم میں 4افراد زخمی ہوئے جبکہ جھنگ روڈ پردومختلف ٹریفک حادثات میں 3افراد زخمی ہوئے۔ ملک سے آنے والی 12 میں سے 5فلائیٹ منسوخ ہو گئیں جن میں سے 8فلائیٹس کو سیالکوٹ اور کراچی سے آپریٹ کیا گیا۔ دبئی سے آنے جانے والی چاروں فلائیٹس بھی منسوخ کر دی گئیں۔ لاہور ائیرپورٹ پر بھی دھند کے باعث 40پروازیں متاثر ہوئیں جن میں سے 12منسوخ اور 28تاخیرکا شکار رہیں ۔ دوسری جانب سموگ کی موجودہ صورتحال سے نمٹنے کے لیے بہتر منصوبہ بندی کے تحت تمام متعلقہ اداروں کی مربوط منظم جدوجہد جاری ہے اور محکمہ تحفظ ماحول پنجاب کی جانب سے آلودگی کے باعث بننے والے 236صنعتی یونٹس سیل کیے جاچکے ہیں۔صوبائی وزیر تحفظ ماحول پنجاب بیگم زکیہ شاہنواز کے مطابق مزید 60کارخانوں کے خلاف کریک ڈائون کرتے ہوئے ایف آئی آر درج کرا دی گئی ہیں۔دریں اثناء انچارج کنٹرول روم گڈو تھرمل سٹیشن نے کہا ہے کہ ہائی ٹرانسمشن لائنوں پر مرمتی کام مکمل کر لیا گیا ہے۔ سندھ، پنجاب اور بلوچستان کے کئی گرڈ سٹیشن کو بجلی کی فراہمی شروع کر دی گئی ہے۔ ہائی ٹرانسمشن لائن گزشتہ رات دھند کی وجہ سے ٹرپ ہوئی تھی۔ کمیر سے نامہ نگار کے مطابق شدید دھوند سموگ کی وجہ سے حد نگاہ صفر تھی اس دوران چک132/9-Lکا محمد دین روڈ کراس کرتے ہوئے نا معلوم گاڑی کے نیچے آ کر موقع پر دم توڑ گیا۔ٹوبہ ٹیک سنگھ سے نمائندہ خصوصی کے مطابق بجلی لوڈ شیڈنگ کے باعث معمولات زندگی متاثر، کاروبار ٹھپ جبکہ طلبہ کو تدریسی مراحل میں شدید دشواری کا سامنا ،14گھنٹوں کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کے باعث کاروباری حضرات کو بھی شدید دشواری کا سامنا ہے۔ قصور سے نمائندہ نوائے وقت کے مطابق گردونواح میںشدید دھند کے باعث تین حادثات میں ایک خاتون سمیت دو افراد جاں بحق اورچھ افرا د زخمی ہو گئے ۔الہ آباد کے علاقہ بھاگی والی کے قریب دھند کے باعث موٹرسائیکل سوار محمد اسلم اور اسکی بیوی آگے جانے والی گدھا ریڑھی سے ٹکرا گئے جس کے نتیجہ میں محمد اسلم شدید زخمی اور اسکی بیوی رسولاں بی بی موقع پر ہی دم توڑگئے اور چھانگا مانگا سٹاپ کے قریب سٹر ک عبور کرتا ہوا رانا قاسم علی نا معلوم گاڑی کی زد میں آکر دم توڑ گیا جبکہ پتوکی بائی پاس کے قریب لاہور سے اوکاڑہ جانے والی مسافر وین دھند کی وجہ سے آگے جانے والے کنٹینر سے ٹکرا گئی جس میں فیصل آباد کی رہائشی شمیم بی بی سمیت پانچ مسافر زخمی ہوگئے۔گوجرانوالہ سے نمائندہ خصوصی کے مطابق شہر میں لوڈشیڈنگ کا دورانیہ 16 گھنٹے سے تجاوز کرگیا۔