بھارت: دلت کے قتل کا فرضی مقدمہ، انصاف نہ ملا تو اسلام قبول کر لیں گے: متاثرہ خاندان

03 جنوری 2016

شاملی / نئی دہلی (آئی این پی) بھارت میں دلت کے قتل کے بعد پولیس گردی کا نشانہ بننے والے خاندان نے انصاف نہ ملنے کی صورت میں مذہب تبدیل کر اسلام قبول کرنے کی دھمکی دیدی۔ بھارتی میڈیا کے مطابق ریاست اترپردیش میں شاملی کے کاندھلہ علاقے میں ایک دلت کے قتل کے بعد متاثرہ خاندان کو پولیس کی جانب سے فرضی مقدموں کا سامنا ہے جس سے تنگ آکر متاثر ہ خاندان نے انصاف نہ ملنے پر مذہب تبدیل کرنے کی دھمکی دی ہے۔ متاثرہ کنبے کا کہنا ہے کہ اگر 25 جنوری تک ملزمان کے خلاف کارروائی نہیں کی گئی تو 26 جنوری کو وہ اسلام مذہب قبول کرلیں گے۔ پولیس کے ایک ترجمان نے بتایا کہ نالا گاؤں کے باشندہ مدن کمار نے پولیس سپرنٹنڈنٹ کو ایک شکایت نامہ دیکر ان کے خلاف فرضی مقدمہ درج کرایا ہے جبکہ اصل قاتل باہر گھومتے پھررہے ہیں۔