دھرنا دینے قومی دولت لوٹنے والے اپنے گریبان میں جھانکیں :شہباز شریف

دھرنا دینے قومی دولت لوٹنے والے اپنے گریبان میں جھانکیں :شہباز شریف

لاہور+ ننکانہ (خبر نگار + نمائندہ نوائے وقت) وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے گذشتہ روز بغیر پروٹوکول کے ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال ننکانہ صاحب کا اچانک دورہ کیا۔ وزیراعلیٰ غیر اعلانیہ دورے پر اچانک ننکانہ صاحب پہنچے اور عام وین میں سفر کرتے ہوئے بغیر پیشگی اطلاع ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال گئے۔ وزیراعلیٰ مختلف وارڈز میں گئے، مریضوں کی عیادت کی اور ان سے علاج معالجہ کے بارے میں دریافت کیا۔ مریضوں اور ان کے لواحقین نے وزیراعلیٰ کو بتایا کہ دوائی تو مفت مل رہی ہے لیکن وارڈز کے اے سی نہیں چل رہے جس پر وزیراعلیٰ خود مختلف وارڈز میں گئے اورخراب ایئر کنڈیشنرز پر برہمی کا اظہار کیا۔ وزیراعلیٰ نے ہسپتال کے خراب ایئر کنڈیشنرز کو فوری طورپر تبدیل کرنے کا حکم دیا اور کہا کہ رمضان شریف میں یہ ایک مجرمانہ غفلت سے کم نہیں اور مریضوں پر ظلم کے مترادف ہے۔ وزیراعلیٰ نے ہسپتال کے وارڈ میں خالی بستر دیکھ کر ڈاکٹروں سے پوچھا تو ڈاکٹر وں نے کہاکہ گرمی کے باعث مریض نہیں آتے جس پر وزیراعلیٰ نے کہا کہ مریضوں کے لئے ایئر کنڈیشنرز کام کریں تو وہ علاج کیلئے بھی آئیں۔ شیخوپورہ کے ڈاکٹر عدنان قیصر کو اچھی کارکردگی پر پانچ لاکھ روپے کا انعام دیا۔ وزیراعلیٰ نے ہسپتال میں صفائی کی ناقص صورتحال اور دیگر عدم دستیاب ضروری سہولتوں پر سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے ہسپتال انتظامیہ کی سرزنش کی۔ وزیراعلیٰ نے ڈی سی او، ایم ایس ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال اور ای ڈی او ہیلتھ کی کارکردگی پر عدم اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ہسپتال میںبہترین طبی سہولتوں کی فراہمی آپ سب کی ذمہ داری ہے جو آپ ادا نہیں کرسکے۔ وزیراعلی نے تینوں کو او ایس ڈی بنانے کا حکم دیا۔ وزیراعلیٰ نے ہسپتال میں موجود ڈاکٹروں، نرسوں اور پیرا میڈیکل سٹاف سے بھی خطاب کیا اورکہا کہ آپ کو اللہ تعالیٰ کو بھی جواب دینا ہے۔ خلق خدا کی خدمت سے گریز کرنے والا خو د کو مسیحا کیسے کہلوا سکتا ہے؟۔ وزیراعلیٰ نے ادویات سٹاک رجسٹر بھی چیک کیا۔ وزیراعلیٰ نے میڈیکل سٹور کی حالت زار پر بھی ہسپتال انتظامیہ کی سرزنش کی۔ علاوہ ازیں وزیراعلیٰ نے کاہنہ فلائی اوور کا افتتاح کردیا، یہ فلائی اوورکاہنہ کاچھا ڈیفنس روڈ ریلوے کراسنگ پر تعمیر کیا گیا ہے۔ افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ڈیڑھ کلو میٹر طویل یہ فلائی اوور ریکارڈ مدت میں مکمل کیا گیا ہے پنجاب میں پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کے تحت بی او ٹی کی بنیاد پر نجی سرمایہ کاری سے تعمیر ہونے والا یہ پہلا منصوبہ ہے۔ اس منصوبے میں بچائے گئے تین ارب روپے تعلیم ،صحت ،پینے کے صاف پانی اوردیگر سماجی شعبوں کی بہتری پر خرچ کیے جائیںگے۔ وزیراعلیٰ نے فلائی اوور کے ٹال کو گاڑیوں کیلئے 35روپے سے کم کر کے 30روپے کرنے کا اعلان کیا۔ وزیراعلیٰ نے خطاب میںاعلان کیا کہ علاقے کے لوگوں سے کوئی ٹال فیس وصول نہیں کی جائے گی اور اس ضمن میں انہیں فری پاس دیئے جائیں گے۔ یہاں سے روزانہ 9ہزار گاڑیاں گزریں گی، ڈیفنس روڈ ،ملتان روڈ،رائیونڈ روڈ ،فیروزپور روڈ اور ڈی ایچ اے کے درمیان اہم رابطہ سڑک ہے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ لاہور رنگ روڈ کے جنوبی حصے کی تعمیر کا معاہدہ فرنٹیر ورکس آرگنائزیشن کیساتھ ہوگیا ہے اور اس کو بھی بی او ٹی کی بنیاد پر بنایا جائے گا۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ اس وقت جب ترقی اور خوشحالی کی گاڑی پٹری پرچڑھ چکی ہے توچند مخالفین اس سفر کو روکنے کے درپے ہیں اور دھرنے کے ذریعے ترقی و خوشحالی کی راہ میں رکاوٹ ڈالنا چاہتے ہیں لیکن دھرنا دینے والے پہلے اپنے گریبا ن میں جھانکیں، بات نکلی تو بہت دور تک جائے گی۔انہوں نے کہاکہ حیرت کی بات ہے کہ جو لوگ سر سے پاؤں تک کرپشن میں ڈوبے ہوئے ہیں وہی احتساب کا نعرہ لگارہے ہیں، ان لوگوں کو پہلے اپنے گریبان میں جھانکنا چاہیے جنہوں نے اس ملک کو بے دردی سے لوٹا ہے اور قومی دولت پر ڈاکہ ڈالا ہے، ان سے پائی پائی نکلوا ئی جائے گی تاکہ انہیں بھی پتہ چلے کہ غریب قوم کی کمائی لوٹنے کا انجام کیا ہوتا ہے ۔ معصوم لوگ دہشت گردی کی نذر ہورہے ہیں اور بے گناہ پاکستانیوں کاخون بہایا جارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ان لوگوں نے قومی دولت لوٹ کر سوئٹزرلینڈ کے بینکوں میں جمع کی ان کے احتساب کا وقت آ گیا ہے۔ قوم کی یہ آواز ہے کہ جنہوں نے ملک کو لوٹا انہیں کسی صورت نہیں معافی ملنی چاہیے۔ کاہنہ فلائی اوور کے افتتاح کے موقع پر وہاں کے رہائشیوں نے مظاہرہ کیا۔ ان کا مطالبہ تھا کہ ان کے بند ہونیوالے راستے کو کھولا جائے۔ گائوں اور قبرستان تک رسائی دی جائے اور انہیں ان کے گھروں کا صحیح معاوضہ دیا جائے۔ علاوہ ازیں وزیراعلی کی زیر صدارت اعلی سطح کا اجلاس ہوا جس میں لائیوسٹاک و ڈیری فارمنگ کی ترقی کیلئے اقدامات کا تفصلی جائزہ لیا گیا۔ وزیراعلی شہباز شریف نے کہا کہ لائیوسٹاک و ڈیری فارمنگ کو معیشت کی مضبوط میں بنیادی اہمیت حاصل ہے۔ لائیو سٹاک سکٹر کوترقی دے کر غربت اور بے روزگاری کے مسائل پرقابو پایا جا سکتا ہے۔ وزیراعلی نے یوم شہادت حضرت علی کرم اللہ وجہہ کے موقع پر صوبہ بھر میں سکورٹی کے فول پروف انتظامات کے حوالے سے پولیس، انتظامیہ اور متعلقہ اداروں کے اعلی حکام کو ہدایات جاری کی ہیں اور کہا ہے کہ کڑی نگرانی کی جائے۔