زارا نور عباس مردوں کی حمایت میں سامنے آگئیں

پاکستانی اداکارہ زارا نور عباس نے مردوں کے حقوق پر بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ مردوں کی ذمہ داریاں کچھ کم ہونی چاہئیں۔اداکارہ زارا نور عباس حال ہی میں ایک نجی ٹی وی شو میں شریک ہوئیں جس دوران میزبان نے اداکارہ زارا نور عباس سے سوال کیا کہ آپ کے خیال میں وہ کون سے 3 سے 4 حقوق ہیں جو مردوں کو ملنے چاہئیں؟میزبان کے سوال پر زارا نور عباس نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ مرد کی ذمہ داریاں کچھ کم ہونی چاہئیں، گھر میں موجود تمام افراد کو ایک دوسرے کی مدد کرنی چاہیے۔اداکارہ نے کہا کہ  ایک اچھے شوہر یا باپ کیلئے مصروف ہونے سے کہیں زیادہ گھر میں موجود ہونا ضروری ہے، اگر مرد کمانے کیلئے باہر  زیادہ رہے گا تو  وہ گھر میں موجود نہیں ہو  پائے گا۔مردوں کو دیئے گئے مشورے میں زارا نور عباس کا کہنا تھا کہ ریسرچ کے مطابق مردوں میں عورتوں کے مقابلے ہارٹ اٹیک کی شرح بہت زیادہ ہے لہٰذا مردوں کو اپنی صحت کا پورا خیال رکھنا چاہیے، مردوں کو سگریٹ نہیں پینی چاہیے کیونکہ تمباکو نوشی صحت کیلئے بہت خطرناک ہے۔شوہر اسد کے کاموں سے متعلق سوال پر زارا نور عباس کا کہنا تھا اسد اپنا ناشتہ خود بناتے ہیں اور میں نے ان پر کبھی کوئی پابندی نہیں لگائی کیونکہ رشتے میں پابندیاں نہیں ہوتیں، رشتہ اسکول نہیں ہوتا جہاں پابندیاں لگائی جائیں، اسد اپنی حدود جانتے ہیں میں انھیں کچھ نہیں کہہ سکتی۔

اُردو کیا ہے؟

محمد نوید اسلام  اُردو زبان کی کہانی اسلامی ثقافت کے ایک بے حد درخشاں باب کی ترجمانی ہے۔ اسلامی فتوحات اور مفتوحہ ممالک ...