عالمی سطح پرغیرمسلم قوتیں مسلم امہ کے مفادات کوزک پہنچانے کیلئے ایک ہوچکی ہےں‘حامدموسوی

17 جولائی 2017

اسلام آباد(نیوزڈیسک) سپریم شیعہ علماءبورڈ کے سرپرست اعلی و تحریک نفاذ فقہ جعفریہ کے سربراہ آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے کہا ہے کہ اسرائیل کی طرف بھارتی جھکاﺅ،حالیہ دورہ اسرائیل کے موقع پرمودی کافلسطینی علاقوں میں نہ جانامسئلہ کشمیرکوکمزورکرنے کی کوشش اوراس بات کی عکاسی ہے کہ عالمی سطح پرغیرمسلم قوتیں مسلم امہ کے مفادات کوزک پہنچانے کیلئے ایک ہوچکی ہےں ، مودی کے اسرائیلی دورے کامقصدبھارتی سرزمین کے ذریعے جنوبی ایشیا میںاسرائیل کوقدم رکھنے کیلئے راہ ہموارکرناہے ،بھارتی وزیراعظم مودی ملک ملک دورے کرکے دنیاکے سامنے اپناموقف بھرپوراندازمیں پیش کررہاہے جبکہ پاکستانی حکومت بھارتی جاسوس کلبھوشن رنگ ہاتھوں گرفتارکیے جانے کاباوجود اس کے اعتراف جرم کواجاگرنہیں کرسکی نہ کوئیفائدہ اٹھایاجاسکا، وطن عزیزکی سیاسی بساط سازشوں ، افتراق وانتشارکاشکارہے ، پوری قوت ایک دوسرے کوزیرکرنے پرصرف کی جارہی ہے ، ایک سال سے پانامہ کیس حاوی ہے ہرایک اسی پربات کررہاہے گویااس سے بڑاکوئی مسئلہ ہی نہیں حالانکہ پاکستان کواندرونی اوربیرونی محاذوں پربڑے چیلنجوں کاسامناہے جن سے نمٹنے کیلئے سیاسی وحدت کی ضرورت ہے اسی صورت میں قوم کی عزت وحرمت دوبالااورقومی مفادات کی نگہدشت ہوسکتی ہے ۔ ان خیالات کااظہارانہوں نے اتوارکو ٹی این ایف جے ضلع سیالکوٹ کے ناظم الاموراحسان اللہ دیال کی سرکردگی میں عمائدین سے خطاب کرتے ہوئے کیااس موقع پرصوبائی صدرپنجاب علامہ سیدحسین مقدسی بھی موجودتھے۔ آقای موسوی نے باورکرایاکہ ازلی دشمن بھارت کاموجودوزیراعظم مودی ہاتھ دھوکرپاکستان کے پیچھے پڑاہواہے جوتابڑتوڑغیرملکی دوروں میں پاکستانی مخالف ہرزہ سرائی میں مصروف ہے جس کامقصدوحیدپاکستان کوغیرمستحکم کرناہے ، اس دہشت گردملک قراردلوانا، سی پیک کوسبوتاژکرنا،نیوکلیئرسپلائی گروپ میں شامل ہونا اور مسئلہ کشمیرسے دنیاکی توجہ ہٹاناہے ۔ انہوں نے کہاکہ بھارت کئی دہائیوں سے کشمیرمیں ریاستی دہشت گردی کررہاہے ، سات آٹھ لاکھ بھارتی افواج نے ظلم کابازارگرم اورکشمیریوں کاجنیادوبارکررکھاہے ۔ انہوں نے کہاکہ بھارت تمام چیزوں کوپاکستان کے کھاتے میں ڈال کرکشمیریوں کیلئے اعانت کودہشت گردی قراردیتاہے۔