A PHP Error was encountered

Severity: Notice

Message: Undefined index: category_data

Filename: frontend_ver3/Templating_engine.php

Line Number: 35

پنجاب کے ٹرانسپورٹروں نے 21 جولائی کو ہڑتال کا اعلان کر دیا‘ سندھ بلوچستان میں آج ہوگی

14 جولائی 2009
لاہور (سٹاف رپورٹر) آج 14 جولائی کو ہونے والی ہڑتال پر ٹرانسپورٹرز برادری تقسیم ہو گئی ہے اور آج صرف صوبہ سندھ اور بلوچستان کے ٹرانسپورٹرز اپنے مطالبات کے حق میں پہیہ جام ہڑتال کر رہے ہیں جبکہ پنجاب اور سرحد کے ٹرانسپورٹرز نے گذشتہ روز ہونے والے اجلاس کے بعد 14 کی بجائے 21 جولائی کو تاجر برادری اور گڈز ٹرانسپورٹرز سے مل کر لوڈ شیڈنگ، تیل کی قیمت میں اضافے اور ناجائز چالانوں اور بین الاضلاعی روٹوں پر ٹرک ڈکیتیوں کے خلاف پہیہ جام اور شٹر ڈاون ہڑتال کا فیصلہ کیا ہے جبکہ اربن اور انٹر سٹی بس اور گڈز ٹرانسپورٹرز نے آج لاہور سمیت ملک بھر میں ہونے والی ہڑتال نہ کرنے کا اعلان کیا ہے۔ آل پاکستان ٹرانسپورٹ اونرز فیڈریشن کے صدر اسرار خان، چیئرمین اعظم نیازی اور پنجاب اربن ٹرانسپورٹ یونین کے جنرل سیکریٹری ارشد خان نے کہا ہے کہ تاجر برادری اور دیگر شہروں کی تنظیموں سے مذاکرات کے بعد ہڑتال 21 جولائی تک مؤخر کرنے کا فیصلہ کیا گیا کیونکہ اس وقت شادیوں کا سیزن ہے اور تاجر برادری نے ہڑتال مؤخر کرنے کی درخواست کی تھی۔ دریں اثناء راولپنڈی میں متحدہ ٹرانسپورٹ فیڈریشن نے بھی پٹرولیم ڈویلپمنٹ لیوی کے نفاذ کے لئے جاری صدارتی آرڈیننس کے خلاف 21 جولائی کو مکمل پہیہ جام ہڑتال کا اعلان کرتے ہوئے واضح کیا ہے کہ اگر 21 جولائی کی علامتی ہڑتال کے بعد بھی اگر صدارتی آرڈیننس واپس نہ لیا گیا کہ فیڈریشن کی سپریم کونسل خیبر تا کراچی تک پہیہ جام ہڑتال کی کال دے گی۔ فیڈریشن کے صدر حاجی اختر اعوان، جنرل سیکرٹری ملک سلطان اعوان نے پیر کے روز پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کسی صورت قابل قبول نہیں۔