وزیراعلیٰ کے حلقے پی پی 159 کے پرائمری سکول میں طلبہ کھلے آسمان تلے بیٹھنے پر مجبور

کاہنہ (نامہ نگار) کاہنہ سر کاری سکولوں کی حالت زار ناقابل بیان ہو گئی، معصوم طلباء شدید گرمی میں کھلے آسمان تلے تعلیم حاصل کرنے پر مجبورہیں۔ تفصیلات کے مطابق وزیر اعلیٰ پنجاب کے اپنے حلقہ پی پی 159کاہنہ میں سرکاری سکولوں کی حالت زارانتہائی ناگفتہ بہ ہے۔ گورنمنٹ پرائمری سکول کچوانہ کے طلبا ء عمارت نہ ہو نے کی وجہ سے شدید گرمی میں کھلے آسمان تلے تعلیم حاصل کر نے پر مجبور ہیں جبکہ سکول کی گرائونڈ میں علاقے کو پانی فراہم کرنے کے لیے پانی والی ٹینکی بنادی ہے جس کی وجہ سے طلباء کھیل کود اور جسمانی سر گرمیوں سے محروم ہو گئے ہیںسکول میں تعلیم حاصل کرنے والے تین سو بچوں کے لیے ایک بھی سیکورٹی گارڈ نہیں جبکہ سکول میں تعلیم حاصل کرنے والے طلباء کے لیے پینے کے پانی کا بھی کو ئی انتظام نہیں گوردوارہ والی گلی میں حکومت پنجاب نے کرڑوں روپے کی لاگت سے سکول کی عمارت تو بنوادی ہے لیکن دوبرس سے زائد کا عرصہ گذر جانے کے باوجود سکول میں کلاسز کا اجراء اہل علاقہ کے لیے معمہ بنا ہوا ہے اہل علاقہ نے وزیر اعلیٰ پنجاب میاں محمد شہباز سے اپیل کی ہے کہ وہ اپنے حلقے میں سرکاری سکولوں کی حالت زار کا فوری نوٹس لیں۔