فیصل آباد اور ساہیوال میں 2 مجرموں کو پھانسی، جھنگ اور لاڑکانہ میں دو کو آج ہوگی

فیصل آباد، گوجرانوالہ‘ساہیوال‘جھنگ‘ لاڑکانہ (نمائندہ خصوصی + نامہ نگاران+نوائے وقت رپورٹ) فیصل آباد اور ساہیوال کی جیلوں میں 2 مجرموں کو پھانسی دے دی گئی۔ تفصیلات کے مطابق فیصل آباد ڈسٹرکٹ جیل میں قید مجرم عدیل شہزاد کو پھانسی دی گئی، مجرم نے 2001 میں پیر محل میں معمولی تنازعہ پر ایک خاتون اور اس کے 3 بچوں کو قتل کردیا تھا۔ سنٹرل جیل ساہیوال میں قتل کے مجرم کو پھانسی دے دی گئی۔ 2000ء میں محمد اشرف عرف اچھو نے مقدمہ بازی کی رنجش پر وارث علی کو قتل کردیا تھا جس کا مقدمہ تھانہ منڈی احمد آباد تحصیل دیپالپور ضلع اوکاڑہ میں درج ہوا تھا۔ گزشتہ روز مجرم محمد اشرف عرف اچھو کو سنٹرل جیل ساہیوال میں تختہ دار پر لٹکا دیا گیا۔ ضروری کارروائی کے بعد میت اُس کے بھائی غلام نبی کے حوالے کر دی گئی۔ڈسٹرکٹ جیل جھنگ میں خاتون کے قاتل کو آج پھانسی دی جائیگی۔ چک 165 شمالی کے مجرم عرفان نے 2006ء میں جھنگ میں دوران ڈکیتی خاتون طلحہ بی بی کو قتل کردیا تھا۔ ادھر سینٹرل جیل لاڑکانہ کے حکام کے مطابق مجرم وارث میر کو آج پھانسی دی جائیگی۔ وارث میر نے 1995ء میں پی آئی اے کی وین کو 10 مسافروں سمیت اغوا کیا تھا۔ ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج گوجرانوالہ حبیب اللہ عامر نے تھانہ صدر کے سوتیلی بیٹی کو زیادتی کا نشانہ بنانے کے مقدمہ میں جرم ثابت ہو جانے پر مجرم اکبر کو 14سال قید اور 30ہزار روپے جرمانے کی سزا کا حکم سنایا ہے جبکہ عدم ادائیگی جرمانہ کی صورت میں مجرم کو مزید تین ماہ قید سخت بھگتنا ہوگی استغاثہ کے مطابق مجرم نے 2014 میں اپنی سوتیلی بیٹی کو زیادتی کا نشانہ بنایا تھا جس کیخلاف اسکی بیوی طیبہ نے مقدمہ درج کرایا تھا۔