’’پنجاب ایجوکیشن فائونڈیشن ’’پڑھو پنجاب ، بڑھو پنجاب‘‘ کی کامیابی میں اہم کردار اداکررہی ہے ‘‘

لاہور(خصوصی رپورٹر)پنجاب ایجوکیشن فائونڈیشن کے پارٹنر سکولز بے وسیلہ طبقات میں تعلیم عام کرنے میں اہم کردار ادا کررہے ہیں- ان سکولوں کی بدولت صوبے کے دور دراز اور پسماندہ علاقوں میں 19لاکھ مستحق بچوں میں تعلیم پھیلانے میں اہم کامیابیاں حاصل ہوئی ہیں- اس طرح گرلز ایجوکیشن کو بھی فروغ ملاہے جس سے’’پڑھو پنجاب، بڑھو پنجاب ‘‘کے مقاصد حاصل کرنے میں اہم پیشرفت ہوئی ہے-یہ بات ایم ڈی پنجاب ایجوکیشن فائونڈیشن طارق محمود نے اپنے دفتر میں مختلف اضلاع سے تعلق رکھنے والے سکول پارٹنرز کے وفد سے ملاقات کے دوران کہی-اس موقع پر ڈپٹی ایم ڈی طارق رفیق اور پروگرام ڈائریکٹرز بھی موجود تھے-ملاقات کے دوران سکول پارٹنرز کے توسط سے فروغ تعلیم کے منصوبوں پر پیشرفت کا جائزہ لیا گیا-طارق محمود نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہاکہ پاکستان کا مستقبل تعلیم سے وابستہ ہے- اس حوالے سے پنجاب ایجوکیشن فائونڈیشن نے بے وسیلہ گھرانوں کے بچوں کی سہولت کے لئے مفید تعلیمی منصوبے متعارف کروائے ہیں تاکہ یہ بچے تعلیم کے ذریعے زندگی کی دوڑ میں آگے بڑھیں-اس طرح غربت و جہالت کے خاتمے میں بھی مدد ملتی ہے -انہوں نے اس امر پر اپنے اطمینان کا اظہار کیاکہ چولستان میں موبائل سکولو ںکے منصوبے سے اس وسیع وعریض صحرا میں آباد خانہ بدوش قبیلوں کے بچوں کو اپنی دہلیز پر تعلیم کی سہولت میسر آئی ہے-ایم ڈی پیف نے بتایا کہ پارٹنر سکولوں کا معیار تعلیم بہتر بنانے کیلئے تربیت اساتذہ کے مربوط پروگرام پر عملدرآمد جاری ہے- اس تربیتی پروگرام سے اساتذہ کو جدید تعلیمی تصورات سے آگاہی کے ساتھ ساتھ بہتر ابلاغی استعداد کار کا فن بھی میسر آیا ہے -اس طرح کوالٹی ایجوکیشن کی فراہمی ممکن ہوگی جس کا فائدہ طالب علموں کو پہنچے گا- اس موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے سکول پاٹنرز نے پنجاب ایجوکیشن فائونڈیشن کے تعلیمی منصوبو ںکو تعلیم عام کرنے میں انتہائی اہم قرار دیااور کہاکہ پیف کے پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کے منصوبوں سے چھوٹے اور درمیانے درجے کے نجی سکولو ںکو خصوصی فائدہ پہنچا ہے- اس طرح 100فیصد انرولمنٹ کا حصول بھی جلد ممکن ہوگا-