نجی سکولوں کی ہڑتال

نجی سکولوں کی ہڑتال

نجی سکول مالکان کے ایک گروپ کی ہڑتال ختم، دوسرے کا ہڑتال جاری رکھنے کا اعلان۔ فیس خود نہیں بڑھائی جا سکے گی، آرڈیننس جاری ہو گیا پنجاب میں نجی سکولوں کی طرف سے فیسوں میں اضافے کی وجہ سے متوسط طبقہ پریشانی کا شکار ہے یہ وہ طبقہ ہے جو سرکاری سکولوں میں معیاری تعلیم نہ ہونے اور اساتذہ کی عدم دلچسپی کی وجہ سے سستے سرکاری سکولوں کی بجائے نجی سکولوں کا رخ کرتا ہے۔نجی سکول مالکان تعلیم کی دولت عام کرنے کی بجائے تعلیم سے دولت کمانے پر یقین رکھتے ہیں جس کی وجہ سے آئے روز سکولوں کی فیسوں میں بلا جواز اضافہ کیا جاتا ہے۔ حکومت نے والدین کے مطالبہ پر سکولوں کی فیسوں میں اضافہ پر قدغن لگائی تو سکول مالکان ہڑتال پر اتر آئے ہیں جبکہ نجی سکولوںکے مالکان کی اکثریت خود اعلیٰ تعلیم سے بے بہرہ ہے۔ اور اکثر تعلیمی ادارے سکول بننے کی شرائط بھی پوری نہیں کرتے۔ آئے روز نت نئے طریقے سے فنڈز اور تقریبات کے نام پر لوٹ مارکی جاتی ہے اب سکیورٹی کے انتظامات نام پر بھی فیسوں میں اضافے کا بوجھ والدین پرڈالا گیا تو والدین نے اس پر احتجاج کیا چنانچہ حکومت نے آر ڈی نینس جاری کر کے فیسوں میں اضافے پر بندش لگا دی جس سے امید ہے کہ والدین کی داد رسی ہو گی۔ ہڑتال کرنے والے نجی سکول مالکان بھی ٹھنڈے دل سے اس مسئلہ پر غور کریں اور والدین کی مجبوریوں کا احساس کرتے ہوئے بلاجواز کی ہڑتال ختم کریں۔