بلدیہ ملیر : 2 ارب 82 کروڑ کا بجٹ پیش الگ تعلیمی فنڈ قائم کرنے کی منظوری

کراچی ( اسٹاف رپورٹر )بلدیہ عالیہ ملیرکا آئندہ مالی سال 2017-18ءکا 2ارب82کروڑ90لاکھ89 ہزار 80روپے تخمینے کا بجٹ پیش کیا گیا ،تعلیم کےلئے ایک فنڈ قائم کرنے کی قرارداد منظور کرتے ہوئے2017 ءکو تعلیم کا سال قرار دیا ہے ،تمام یونین کمیٹیوں میں ایک ایک ماڈل اسکول بنانے اور مراکز صحت کی بہتری اور عوام کو صحت کی سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنانے اقدام کئے جائیں،ہم نے اپنے 10ماہ میں ہی بلدیہ ملیرکی مختلف یونین کمیٹیوں میں تقریباََ30 کروڑ روپے کی خطیر رقم سے ترقیاتی و تعمیراتی کام کرائے،چیئرمین جان محمد بلوچ تفصیلات کے مطابق ملیر میونسپل کارپوریشن سال 2017-18 بجٹ اجلاس چیئرمین جان محمد بلوچ کی صدارت میں ہوا اجلاس میں آئندہ مالی سال 2017-18ءکا 2ارب82کروڑ90لاکھ89 ہزار 80روپے تخمینے کا بجٹ پیش کیا گیا جو کہ طویل بحث و مباحثے اور غور و خوص کے بعد اتفاق رائے سے منظور کر لیا گیا۔ بجٹ میں اخراجات کا تخمینہ2ارب83 کروڑ78لاکھ روپے لگایا گیا ہے،اگلے مالی پانی جیسی بنیادی سہولت کی فراہمی کی مد میں 10کروڑ ، نکاسی آب کی بہتری کیلئے 11کروڑ 15 لاکھ ،تعلیم کی بہتری کیلئے 04کروڑ،عوام کو طبی سہولتیں فراہم کرنے کیلئے 01کروڑ22لاکھ رکھے گئے ہیں بجٹ اجلاس میں وائس چیئرمین بلدیہ ملیر عبدالخالق مروت ، میونسپل کمشنر عمران اسلم ، اراکین کونسل اور افسران شریک تھے۔