سیشن کورٹ لاہور میں گولیاں چل گئیں

31 جنوری 2018 (21:08)

لاہور سیشن کورٹ میں ایڈیشنل جج عمران شفیع کی عدالت کے باہر دو گروپوں میں تصادم ہو گیا، مخالفین کی فائرنگ سے زیر حراست ملزم امجد ملک اور ایک پولیس اہلکار آصف موقع پر ہی جاں بحق ہو گئے، واقعہ میں دو افراد زخمی بھی ہوئے.
فائرنگ کے بعد پولیس اور ڈولفن فورس کی بھاری نفری سیشن کورٹ پہنچ گئی، ملزمان اسلحہ لہراتے ہوئے باآسانی فرار ہو گئے۔
سیشن کورٹ میں فائرنگ کے واقعہ کے بعد جہاں خوف و ہراس پھیل گیا وہیں عدالتوں کی ناقص سیکورٹی کا پول بھی کھل گیا، سیشن عدالت میں اسلحہ کیسے پہنچا، عدالتی اور پولیس عملے کی کارکردگی پر پهر سوالیہ نشان لگ گیا. ذرائع کے مطابق فائرنگ کے ملزموں کو سیشن عدالت سے باآسانی فرار ہونے میں مدد بهی فراہم کی گئی، پولیس اہلکاروں نے فائرنگ کرنیوالے کسی ملزم کو گرفتار کرنے کی زحمت نہیں کی۔