پارلیمنٹ اورپی ٹی وی حملہ سمیت 4 مقدمات میں شاہ محمود قریشی کی 8 فروری تک عبوری ضمانت منظور

31 جنوری 2018 (11:24)

 اسلام آباد کی انسداد دہشت گردی عدالت کے جج شاہ رخ ارجمند نے پاکستان تحریک انصاف کے وائس چیئرمین مخدوم شاہ محمود قریشی کی دہشت گردی کے چار مقدمات میں ایک لاکھ روپے کے مچلکوں کے عوض عبوری ضمانت8 فروری تک منظور کر لی۔ بدھ کو پی ٹی وی حملہ کیس، پارلیمنٹ حملہ کیس، ایس ایس پی عصمت اللہ جونیجو تشدد کیس سمیت دہشت گردی کے چار مقدمات میں شاہ محمود قریشی اپنے وکلاء کے ہمراہ انسداد دہشت گردی عدالت میں پیش ہوئے۔ عدالت نے شاہ محمود قریشی کی چاروں مقدمات میں 8 فروری تک عبوری ضمانت منظور کر لی۔ میڈیا سے گفتگو میں شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ ہمارے خلاف مقدمات میں انسداد دہشت گردی، اقدام قتل سمیت دیگر دفعات لگائی گئی ہیں۔ یہ سیاسی بنیادوں پر مقدمہ درج ہوا تھا جو الزامات لگائے گئے وہ من گھڑت تھے۔ میں آج عدالت میں پیش ہوا۔ عدالت نے میری عبوری ضمانت منظور کر لی ہے۔ شخصی ضمانت اور ضمانتی مچلکے جمع کروانے کا حکم دیا گیا ہے۔ مجھے شامل تفتیش ہونے کا حکم دیا گیا ہے اور میں آج شامل تفتیش ہو جاؤں گا اور پولیس کے سامنے اپنا بیان ریکارڈ کرواؤں گا اور موقف پیش کروں گا۔ عدالت نے آئندہ تاریخ 8 فروری مقرر کی ہے اور میں حاضر ہو جاؤں گا۔ کاش ہمارے ملک میں سیاسی بنیادوں پر مقدمے درج ہونا بند ہو جائیں تو بہت سے لوگوں کے لئے آسانی پیدا ہو جائے گی اور عدالتوں کے لئے بھی آسانی ہو جائے گی۔