پنجاب حکومت بنائیں گے نوازشریف کے آگے پیچھے گاڑیاں ہم مظلوم تو بکتر بند مںی آتے تھے :زرداری

31 جنوری 2018

ملتان+تونسہ شریف (نیٹ نیوز + ایجنسیاں+نامہ نگار ) سابق صدر آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ نواز شریف کیسے مظلوم ہیں ان کے 6 گاڑیاں آگے اور 6 گاڑیاں پیچھے ہیں، تونسہ میں مخدوم عطاء اللہ تونسوی کی جانب سے ظہرانہ میں میڈیا سے گفتگو میں آصف علی زرداری نے سابق وزیراعظم نواز شریف پر خوب وار کئے اور کہا کہ مظلوم تو ہم تھے جو بکتربند گاڑیوں میں آتے تھے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ پنجاب کے حکمران ایسے منصوبوں کا افتتاح کرتے ہیں جن کی نہ شروعات اور نہ ہی اختتام ہے، لوٹی ہوئی دولت واپس لانا ان کے بس کا روگ نہیں، پیپلز پارٹی کی حکومت لا سکتی ہے۔ آصف علی زرداری نے اس موقع پر دعویٰ کیا کہ اب کی بار پنجاب میں ان کی جماعت پیپلز پارٹی حکومت بنائے گی۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ ہمیں بھارت سے نہیں مودی کی سوچ سے مسئلہ ہے، موجودہ بھارت نہرو کا نہیں ہے۔ آصف زرداری نے کہا کہ امید ہے سینٹ الیکشن وقت پر ہوں گے۔ جنوبی پنجاب اور لاہور میں بہت فرق ہے۔ پنجاب حکومت کی تنگ نظری ہے کہ جنوبی پنجاب میں ہمارے ایم پی اے کو فنڈز نہیں دیئے جاتے، اس کے برعکس جب ہماری حکومت تھی تو ہم نے موجودہ حکمران جماعت کے تمام ایم پی ایز اور ایم این ایز کو ناصرف فنڈز جاری کئے بلکہ انہیں تمام مراعات بھی فراہم کی گئیں، چوہدری نثار کا بجٹ ہمارے اپنے ایم این ایز سے بھی زیادہ تھا، یہ ہمارے اور مسلم لیگ (ن) کے فعل میں فرق ہے، جنوبی پنجاب صوبہ بن کر رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے جیلیں بھی کاٹیں اور جھوٹے کیسز کا سامنا بھی کیا ہے۔ نوازشریف مظلوم نہیں، حکومت میں بھی ہیں اور اپوزیشن میں بھی۔ پاناما ایشو باہر سے آیا ہے، آصف زرداری نے کہا کہ سی پیک کو سمجھا ہی نہیں گیا، اس کا موازنہ منگولیا کے سی پیک سے کیا جائے تو سمجھ آجائے گی۔ مودی ہٹلر کی طرح سیاست کررہے ہیں۔علاوہ ازیں پیپلز پارٹی نے سینٹ الیکشن کیلئے پارلیمانی بورڈ تشکیل دیدیا۔ ترجمان پی پی کے مطابق آصف زرداری اور بلاول بھٹو بھی بورڈ میں شامل ہیں۔ بورڈ میں فریال تالپور، قائم علی شاہ، راجہ پرویز اشرف، یوسف رضا گیلانی، فرحت اللہ بابر، نیئر حسین بخاری، صابر بلوچ شامل ہیں۔ بورڈ سینٹ انتخابات 2018ء کے امیدواروں کا فیصلہ کرے گا۔ پاکستان مسلم لیگ ن نے اجلاس میں آصف علی زرداری کی سینٹ انتخابات میں ہارس ٹریڈنگ کی سازشوں کو ناکام بنانے کا اعلان کردیا، واضح کیا گیا ہے کہ آصف علی زرداری کا پارٹی کیلئے چیئرمین سینٹ کا عہدہ حاصل کرنا دیوانہ کا خواب ہے خواب میں وہ کچھ بھی دیکھ سکتے ہیں۔ سینٹ انتخابات اور چیئرمین سینٹ کے انتخاب کا جب میدان لگے گا آصف علی زرداری کو لگ پتہ جائے گا۔ پارٹی قائد نوازشریف جلد پشاور اور چترال اور مظفرآباد میں جلسوں سے خطاب کریں گے۔