.عاصمہ قتل: نامزد ملزم گرفتار دوسرے کو سعودی عرب سے پکڑنے کیلئے ریڈ وارنٹ جاری

31 جنوری 2018

پشاور(بی بی سی اردو ڈاٹ کام) کوہاٹ کے ضلعی پولیس سربراہ عباس مجید مروت نے کہا ہے ایوب میڈیکل کالج ایبٹ آباد میں ایم بی بی ایس کی تھرڈ ایئر کی طالبہ عاصمہ رانی کے قتل میں نامزد ملزم صادق آفریدی کو گرفتار کرلیا گیا ہے جبکہ انھوں نے کہا کہ سعودی عرب فرار ہونے والے قتل کے مرکزی ملزم کی گرفتاری کے لیے ریڈ وارنٹ جاری کردیا گیا ہے۔ انھوں نے کہا مرکزی ملزم کی گرفتاری کے لیے انٹرپول سے مدد لینے کیلئے کارروائی کی جارہی ہے۔گذشتہ رات گرفتار ہونے والا ملزم صادق آفریدی مرکزی ملزم مجاہد آفریدی کا بھائی ہے۔ پولیس کے مطابق حراست میں لیے جانے والے ملزم نے مبینہ قاتل مجاہد آفریدی کی معاونت کی تھی۔ مقتولہ کے بھائی عرفان کی طرف سے درج کردہ ابتدائی رپورٹ میں کہا گیا ہے قاتل ان کی بہن سے شادی کرنا چاہتا تھا لیکن ملزم پہلے سے شادی شدہ تھا جس کے باعث رشتہ دینے سے انکار کیا گیا تھا۔مقتولہ کے والد نے الزام لگایا ہے کہ ان کی بیٹی کا قاتل حکمران جماعت تحریک انصاف کے ضلعی صدر کا بھتیجا ہے۔ انھوں نے کہا کہ قاتل واردات کرکے کیسے ملک سے فرار ہوا اور پولیس اس دوران کہاں تھی۔ادھر ملزم کے چچا اور تحریک انصاف کوہاٹ کے صدر آفتاب عالم نے کہا ہے قاتل کی گرفتاری کے لیے پولیس اور قانون نافذ کرنے والے اداروں سے ہر قسم کا تعاون کیا جائے گا۔ انھوں نے ان اطلاعات کی سختی سے تردید کی کہ قاتل کو بچانے کے لیے سیاسی اثرو رسوخ کا استعمال کیا جارہا ہے۔مقتولہ عاصمہ رانی کی بہن صفیہ رانی نے نجی ٹی وی سے بات کرتے ہوئے کہا ہے میری بہن عاصمہ رانی کو ملزموں نے منصوبہ بندی کے تحت قتل کیا۔ پولیس اور آفتاب عالم کو علم تھا ملزم دھمکیاں دے رہا ہے۔ مجاہد آفریدی نے پہلے سے ہی سعودی عرب کا ویزا حاصل کررکھا تھا، ملزم پی ٹی آئی کے رہنما کا بھتیجا اور ارب پتی ہے اس لئے پولیس نے نہیں پکڑا۔ میرا خاندان غیر محفوظ ہوچکا ہے ہمیں تحفظ فراہم کیا جائے۔ آرمی چیف اور چیف جسٹس ہمیں انصاف دلائیں۔ بیورو رپورٹ کے مطابق پراونشل ڈاکٹرز ایسوسی ایشن یوتھ فورم نے حکومت کو کوہاٹ میں میڈیکل کالج کی طالبہ عاصمہ رانی کے قتل میں ملوث مرکزی ملزم کی گرفتاری کیلئے 72 گھنٹوں کی ڈیڈ لائن دیدی بصورت دیگر صوبہ بھر کے تمام ہسپتالوں اور میڈیکل کالجز میں احتجاج کا سلسلہ شروع کردیا جائے گا۔ پشاور پریس کلب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے فورم کے صدر حامد خان اور دیگر کا کہنا تھا ملزم کو گرفتار نہ کرنا پولیس کی ناکامی ہے۔