مظفرگڑھ: 13 سالہ لڑکی کے قتل کا معمہ حل‘ بہنوئی گرفتار

31 جنوری 2018

مظفرگڑھ(نامہ نگار) 13سالہ لڑکی کے قتل کا معمہ صرف3روز میں حل کرلیا گیا ،قتل میں ملوث لڑکی کے بہنوئی اور بہنوئی کے والد کو گرفتار کرلیا گیا ۔ناراض بیوی کے میکے رہنے کے رنج میں13سالہ سالی کو بے دردی سے قتل کیا گیا تھا۔ڈی پی او آفس میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے ڈی پی اوملک اویس احمد کا کہنا تھا کہ 27جنوری کو چوک سرور شہید کے علاقے میں13سالہ آسیہ کوگلے پر چھری پھیر کرقتل کردیا گیا تھا ۔ڈی پی اوکیمطابق واقعہ کا مقدمہ تھانہ سرور شہید میں درج کیا گیا اور پولیس نے سائنسی طریقہ تفتیش کے ذریعے 2ملزمان کو گرفتار کرلیا ۔ڈی پی اوکیمطابق گرفتار ہونے والے افراد میں لڑکی کا بہنوئی بلال اور بہنوئی کا والد شامل ہے ۔ڈی پی اومظفرگڑھ ملک اویس احمد کا کہنا تھا کہ ملزمان نے قتل کا اعتراف کرلیا ہے ۔ مرکزی ملزم کیمطابق اسکی بیوی روٹھ کراپنے میکے چلی گئی تھی جس کے رنج میں اس نے اپنی سالی کو قتل کیا ۔ڈی پی او کا پریس کانفرنس کے دوران یہ بھی کہنا تھا کہ ملزم نے اپنے سالی کو زیادتی کا نشانہ بنانے کی بھی کوشش کی ۔ ایس ایچ او تھانہ سرور شہیداور مقدمہ کی تفتیش کرنے والی پولیس ٹیم کے لیے تعریفی سرٹیفیکیٹس اور نقد انعامات کا اعلان بھی کیا۔

13 سالہ لڑکی

آئین سے زیادتی

چلو ایک دن آئین سے سنگین زیادتی کے ملزم کو بھی چار بار نہیں تو ایک بار سزائے ...