عاصمہ قتل‘ نامزد ملزم گرفتار‘ دوسرے کو پکڑنے کیلئے ریڈ وارنٹ جاری

31 جنوری 2018

پشاور(بی بی سی اردو ڈاٹ کام) کوہاٹ کے ضلعی پولیس سربراہ عباس مجید مروت نے کہا ہے ایوب میڈیکل کالج ایبٹ آباد میں ایم بی بی ایس کی تھرڈ ایئر کی طالبہ عاصمہ رانی کے قتل میں نامزد ملزم صادق آفریدی کو گرفتار کرلیا گیا ہے جبکہ انھوں نے کہا کہ سعودی عرب فرار ہونے والے قتل کے مرکزی ملزم کی گرفتاری کے لیے ریڈ وارنٹ جاری کردیا گیا ہے۔ انھوں نے کہا مرکزی ملزم کی گرفتاری کے لیے انٹرپول سے مدد لینے کیلئے کارروائی کی جارہی ہے۔گذشتہ رات گرفتار ہونے والا ملزم صادق آفریدی مرکزی ملزم مجاہد آفریدی کا بھائی ہے۔ پولیس کے مطابق حراست میں لیے جانے والے ملزم نے مبینہ قاتل مجاہد آفریدی کی معاونت کی تھی۔ مقتولہ کے بھائی عرفان کی طرف سے درج کردہ ابتدائی رپورٹ میں کہا گیا ہے قاتل ان کی بہن سے شادی کرنا چاہتا تھا لیکن ملزم پہلے سے شادی شدہ تھا جس کے باعث رشتہ دینے سے انکار کیا گیا تھا۔مقتولہ کے والد نے الزام لگایا ہے کہ ان کی بیٹی کا قاتل حکمران جماعت تحریک انصاف کے ضلعی صدر کا بھتیجا ہے۔ انھوں نے کہا کہ قاتل واردات کرکے کیسے ملک سے فرار ہوا اور پولیس اس دوران کہاں تھی۔ادھر ملزم کے چچا اور تحریک انصاف کوہاٹ کے صدر آفتاب عالم نے کہا ہے قاتل کی گرفتاری کے لیے پولیس اور قانون نافذ کرنے والے اداروں سے ہر قسم کا تعاون کیا جائے گا۔ انھوں نے ان اطلاعات کی سختی سے تردید کی کہ قاتل کو بچانے کے لیے سیاسی اثرو رسوخ کا استعمال کیا جارہا ہے۔

عاصمہ قتل