معافی مانگنے اور ہتھیار پھینکنے والوں سے بات ہو سکتی ہے‘ ضیاء عباس

31 جنوری 2018

کراچی(اسٹاف رپورٹر) سینئر سیاستداں اور مسلم لیگ کے سابق سیکرٹری جنرل سید ضیاء عباس نے کہا ہے کہ ہتھیار پھینکنے اور گناہوں سے تائب ہونے والوں سے بات چیت ہوسکتی ہے لیکن بے گناہ انسانوں کو خون میں نہلانے والے دہشت گردوں کے لئے دنیا ہی نہیں آخرت میں بھی معافی کی کوئی گنجائش نہیں۔ انہوں نے کہا کہ طالبان اور داعش جیسی انتہا پسند تنظیموں سے تعلق رکھنے والے د ہشت گرد مسلمان تو کیا انسان کہلانے کے بھی مستحق نہیں ہیں اچھے یا میرے طالبان کا کوئی وجود نہیں‘ دہشت گردی کرنے والے صرف دہشت گرد ہیں اور ان سے آہنی ہاتھوں سے نمٹا جانا ضروری ہے۔ سید ضیاء عباس نے افغانستان کے دارالحکومت کابل میں یکے بعد دیگرے دہشت گرد حملوں کے واقعات پر افسوس کا اظہار بھی کیا اور کہا کہ دہشت گردوں کا پشت پناہ کون ہے اور ان کی مالی اور لاجسٹک سپورٹ کہاں سے ہو رہی ہے اس کا پتہ لگانے کی ضرورت ہے۔

ضیاء عباس