منی لانڈرنگ کیس‘ڈائریکٹر این ٹی ایس کو اشتہاری قرار دینے کی کارروائی کا آغاز

31 جنوری 2018

راولپنڈی ( نیوز رپورٹر)کسٹم راولپنڈی کی خصوصی عدالت کے جج شیراز کیانی نے 2 ارب روپے سے زائدکی منی لانڈرنگ اور ٹیکس چوری کے مقدمہ میں نیشنل ٹیسٹنگ سروس (این ٹی ایس)کے ڈائریکٹر ہارون الرشید کے وارنٹ گرفتاری کی تعمیل نہ ہونے پر انہیں اشتہاری قرار دینے کے لئے ضابطہ فوجداری کی دفعہ87,88کی کارروائی شروع کر دی ہے ۔جبکہ ڈاکٹر محمد جنید،اظہارحسین،محمد سہیل غنی،ڈاکٹرشاہدخان اورڈاکٹر شیرازپرمشتمل 5شریک ملزمان کے ضمانتی مچلکے عدالت میں جمع ہو گئے جبکہ عدالت عالیہ سے رجوع کرنے کے باعث پانچوں ملزمان کے خلاف فرد جرم عائد کرنے کی کاروائی 28فروری تک موخر کر دی گئی ہے منگل کو سماعت کے موقع پر ملزمان کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ ملزمان کی جانب سے عدالت عالیہ راولپنڈی بنچ میں درخواست دائر کی گئی ہے ملزمان کے وکلا نے عدالت میں دائر ایک نئی درخواست میں استدعا کی کہ ملزمان کے بینک اکاؤنٹ منجمند کرنے کی کارروائی میں پراپرٹی کو بھی ساتھ منسلک کیا جا ئے مذکورہ تمام ملزمان پر الزام ہے کہ انہوں نے5بنک اکائونٹس چھپائے اور اور جعلی بیان حلفی جمع کروا ئے اس طرح ادارے میں منی لانڈرنگ اور ٹیکس چوری کا ارتکاب کر کے نہ صرف قومی خزانے کو2ارب 2کروڑ54لاکھ روپے سے زائد کا نقصان پہنچایاگیابلکہ سینکڑوں طلبہ کے مستقبل کے ساتھ کھیلا گیا یاد رہے کہ رواں ماہ کے پہلے عشرے میں ایف بی آر نے این ٹی ایس کے دفتر میں چھاپہ مار کر 5سالہ ریکارڈ اور بنک اکائونٹس کا ڈیٹا قبضے میں لیا تھا۔