خان بیلہ بائی پاس کا منصوبہ ختم ہونے سے حادثات ہونے لگے

31 جنوری 2018

خان بیلہ (نمائندہ نوائے وقت) ڈاکٹر نذیر احمد صدیقی تحصیل صدر پی ٹی آئی تحصیل لیاقت پور نے پریس کا نفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ خان بیلہ شہر سے گزرنے والی موٹر وئے روڈ کی تعمیر کے وقت بائی پاس کا منصوبہ ختم کرنے سے اب تک سینکڑوں شہری حادثات کی وجہ سے جاں بحق اور ہزاروں زخمی ہوکر سسک سسک کر زندگی گزار رہے ہیں 50000آبادی کے شہر سب تحصیل خان بیلہ میں بائی پاس کی تعمیر کی بجائے قومی شاہراہ کو شہر کے بیچ میں سے گزارنے کے این ایچ اے کے فیصلے ہوں یا چار کلومیٹر پر محیط شہر کے اندر روڈ پر کیٹ آئیز یا سپیڈ بریکر لگانے میںابتک سست رفتاری کے سلسلے ہوں ‘ این ایچ اے اپنا فرض ادا کر نے کی بجائے لا تعلقی کا مظہر ایک ایسا ادارہ بنا ہوا ہے جس کی دہلیز پر دستک دیتے دیتے لوگ تھک گئے ہیں لیکن مجال ہے کہ این ایچ اے کے چیئر مین ہوں یااس ادارے کے دامن سے وابستہ ضلع رحیم یار خان کے افیسران ‘آج تک ٹس سے مس نہیں ہوئے کیونکہ نہ تو انہیں اپنے محکمے میں جوابدہی کا خوف ہے اور نہ ہی خدا خوفی‘ بلکہ انہوں نے ہمیشہ ہی اس کرسی پربیٹھ کر سداکے لیے ہی زندہ رہنے کا پختہ یقین بنا رکھا ہے۔