متوازی تنظیم کے زیراہتمام پنجاب گیمز کی کوئی حیثیت نہیں : جنرل (ر) عارف

31 دسمبر 2013

لاہور(سپورٹس رپورٹر) پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن کے صدر لیفٹیننٹ جنرل (ر) عارف حسن نے کہا کہ متوازی تنظیم کے زیراہتمام رواں سال ہونے والی نیشنل گیمز کی طرح پنجاب گیمز کی کوئی حیثیت نہیں۔ تاہم میں پر امید ہوں کہ پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن کے حوالے سے پیدا شدہ صورتحال جلد ٹھیک ہو جائے گی۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے 60 ویں نیشنل ریسلنگ چیمپئن شپ کے افتتاح کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ غیرقانونی گیمز کے انعقاد سے فائدہ ہونے کی بجائے الٹا نقصان ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا نیشنل ریسلنگ چیمپئن شپ کا شاندار انعقاد کیا جا رہا ہے جس سے نئے پہلوان بھی سامنے آئیں گے جہاں تک آرمی کی قومی چیمپئن شپ میں عدم شرکت ہے اس پر افسوس ضرور ہے ۔انہوں نے کہا کہ پاکستان ریسلنگ فیڈریشن کے صدر چودھری اصغر اور سیکرٹری ارشد ستار کی کوششوں سے پاکستان میں ریسلنگ کا کھیل ترقی کر رہا ہے پنجاب اولمپک ایسوسی ایشن کے سیکر ٹری جنر ل ادریس حیدر خواجہ نے پنجاب گیمز کو چھلاوا گیمز کا نام دیتے ہوئے اسے دھوکہ قرار دیا۔ انہوں نے حکومت پنجاب سے مطالبہ کیا کہ وہ غیر قانونی گیمز کرانے والوں کے خلاف سخت ایکشن لیں ۔انہوں نے وزیر اعلیٰ کے نام خط میں پاکستان اور انڈیا کے پنجاب کے درمیان دوسری گیمز کی میزبانی کے لئے اجازت مانگ لی۔ وزیر اعلیٰ کے نام خط میں کہا کہ اس مرتبہ انڈو پاک پنجاب گیمز کی میزبانی پاکستانی پنجاب کے ذمے ہے۔