ایچ ای سی کے مستقل سربراہ کی تعیناتی عمل میں لائی جائے: آئینی درخواست دائر

31 دسمبر 2013

اسلام آباد (وقائع نگار) چیئرمین ایچ ای سی کی مستقل تعیناتی کے حوالے سے آئینی درخواست دائر کر دی گئی، درخواست بانی چیئرمین ہائر ایجوکیشن کمشن پروفیسر ڈاکٹر عطاء الرحمن نے میاں عمر حنیف کھچی ایڈووکیٹ کے توسط سے دائر کی۔ آئینی درخواست کے ذریعے عدالت عالیہ سے استدعا کی گئی کہ ایچ ای سی کے مستقل سربراہ کی عدم تعیناتی کی وجہ سے تعلیمی معاملات کافی متاثر ہو رہے ہیں درخواست میں یہ بھی تحریر کیا گیا کہ گذشتہ چار ماہ سے چیئرمین ایچ ای سی کی تعیناتی نہ ہو سکی جوکہ ایچ ای سی کے ایکٹ کی بھی واضح خلاف ورزی ہے۔ آئینی درخواست کے مطابق پاکستان جنوبی ایشیا کا واحد ملک ہے جہاں اعلیٰ تعلیم کا واحد ریگولیٹری ادارہ مستقل سربراہ کے بغیر کام کر رہا ہے۔ وفاقی حکومت کو ہدایت جاری کی جائے کہ وہ فوری طور پر  ایچ ای سی ایکٹ کے مطابق بین الاقوامی شہرت کے حامل تجربہ کار اور قابل علمی شخصیت کو میرٹ اور شفاف انداز میں ایچ ای سی کا مستقل سربراہ مقرر کیا جائے تاکہ 150سے زائد جامعات، 282یونیورسٹیز کیمپسز، 12لاکھ سے زائد طلبا 32000سے زائد یونیورسٹی اساتذہ اور ایک لاکھ سے زائد یونیورسٹی ملازمین کے مسائل بہتر طور پر حل کئے جا سکیں۔