شیخوپورہ: انتخابی رنجش پر تحریک انصاف کا کارکن قتل، 2 بھائی شدید زخمی

31 دسمبر 2013

شیخوپورہ (نامہ نگار خصوصی)  تھانہ صدر فاروق آباد کے یونین کونسل 77 اوگند میں انتخابی رنجش کی بناء پر مسلم لیگ (ن) کے حمایت یافتہ امیدوار نے اپنے مسلح ساتھیوں کے ہمراہ مخالف سیاسی جماعت پاکستان تحریک انصاف کے کارکن کو فائرنگ کرکے ہلاک اور اسکے دو سگے بھائیوںکو شدید زخمی کردیا جنہیں مخدوش حالت کے پیش نظر ڈی ایچ کیو ہسپتال میں منتقل کردیا گیا ہے ، پی ٹی آئی کے کارکن کے اس قتل کی خبر شیخوپورہ میں جنگل کی آگ کی طرح پھیل گئی، ضلعی صدر پی ٹی آئی کنور عمران سعید، شفقت علی کجر، احمد معین سندھو سمیت دیگر رہنما اور کارکنان ہسپتال پہنچ گئے جہاں انہوں نے حکومت کے خلاف شدید نعرے بازی کی۔ اس احتجاج کی اطلاع پا کر پولیس بھی موقع پر پہنچ گئی،  مقتول کارکن کے پوسٹ مارٹم کے بعد نعش ورثاء کے حوالے کردی گئی جسے آج آبائی گائوں اوگند میں سپرد خاک کیا جائے گا۔ پی ٹی آئی کے حمایت یافتہ امیدوار برائے چیئرمین یوسی 77 سلیم رضا بھٹی اپنے حامیوں کے ہمراہ مذکورہ گائوں میں کنویسنگ کررہے تھے جس کو دیکھ کر مسلم لیگ (ن) کے حمایت یافتہ امیدوار رائے نوید اور اسکے ساتھیوں نے پی ٹی آئی کے امیدوار کے حمایتیوں سے ووٹ مانگنا شروع کردیئے۔  انکار پر ملزمان نے مشتعل ہو کر فائرنگ کر دی جس کی زد میں آکر کارکن مقبول احمد ہلاک اور دو سگے بھائی صدیق اور بشیر بھی شدید زخمی ہوگئے قتل کی اس واردات کے بعد علاقہ میںشدید خوف و ہراس اور عدم تحفظ کی فضاء پھیل گئی، تھانہ صدر فاروق آباد پولیس مصروف تفتیش ہے۔