باغبان آم کو کورے سے بچانے کیلئے باغات میں دھواں کریں: ترجمان محکمہ زراعت

31 دسمبر 2013

لاہور (پ ر) باغبان آم کے پودوں کو شدید سردی اور کورے سے بچانے کے لئے موسمی پشین گوئی پر نظر رکھیں اور بروقت حفاظتی اقدامات کریں۔ جب رات کو کورا پڑنے لگے تو باغات میں دھواں کریں تاکہ کورے کا اثر کم سے کم ہو۔ کورے والی راتوں میں آبپاشی کریں۔ آبپاشی کردینے سے زمین کا درجہ حرارت بڑھ جاتا ہے۔ یوں ان پودوں کو محفوظ رکھنے میں مدد ملتی ہے۔ محکمہ زراعت پنجاب کے ترجمان کے مطابق نرسری میں آم کے پودوں کو شیشم وغیرہ کی شاخوں کے ساتھ اس طرح ڈھانپ دیں کہ پودوں پر دن کے وقت سورج کی روشنی بھی پڑتی رہے۔ ترجمان نے مزید بتایا کہ آم کی نرسری کو کورے سے بچانے کے لئے پلاسٹک سے بھی ڈھانپا جاسکتا ہے۔ باغ میں آم کے پودوں کا قد پانچ فٹ سے بڑا ہونے کی صورت میں 5% چونے کا سپرے بھی کیا جاسکتا ہے۔ اس طرح چونے کی ایک پتلی تہہ پتوں اور شاخوں پر کورے کے اثرات کو کم کرتی ہے۔ بڑے پودوں کے تنوں پر سفیدی کریں اور چھوٹے پودوں کے تنوں پر پرالی وغیرہ باندھ دیں۔