نادہندہ کراچی واٹر اینڈ سیوریج بورڈکے الزامات بے بنیاد ہیں: کے ای ایس سی

31 دسمبر 2013

کراچی ( اسٹاف رپورٹر) کراچی الیکٹرک سپلائی کمپنی نے اپنے ایک بیان میں ادارے کے سب سے بڑے نادہندہ کراچی واٹر اینڈ سیوریج بورڈ کی جانب سے ایک بار پھر جاری کردہ بے بنیاد الزامات کی دو ٹوک تردید کی ہے۔کے ای ایس سی کے بیان میں کہا گیا ہے کہ پمپنگ اسٹیشنوں پر بجلی کا تعطل کے ای ایس سی کی کسی کوتاہی کی وجہ سے نہیں ہوا ، بجز مرکزی کیبل کی خرابی کے جو 28 دسمبر کو کے ڈی اے فلٹر پلانٹ میںہوگئی تھی۔ فلٹر پلانٹ کو فوری طور پر متبادل ذرائع سے بجلی فراہم کر دی گئی تھی جس کا مطلب یہ ہوا کہ کوئی تعطل نہیں ہوا۔کے ای ایس سی نے وضاحت کی کہ جو تین دیگر پلانٹس کراچی واٹر اینڈ سیوریج بورڈکے دعوے کے مطابق بجلی سے محروم ہیں اس میںکے ای ایس سی کا کوئی عمل دخل نہیں ہے بلکہ وہ خرابی اُن پرانے تاروں اور کیبلوں میں کراچی واٹر اینڈ سیوریج بورڈ کی غفلت کی وجہ سے پیدا ہوئی جن کو تبدیل کرنے کے لئے کے ای ایس سی کی جانب سے واٹر بورڈ کو متعدد بار کہا جا چکا تھا۔ تفصیلات فراہم کرتے ہوئے بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ مذکورہ داخلی خرابیاں 29 دسمبر کو پیش آئیں جن کی مرمت میں ایک گھنٹے سے بھی کم وقت لگا تھا، لیکن کراچی واٹر اینڈ سیوریج بورڈ نے اس معاملے کو کچھ اور رنگ دے کر پیش کیا۔ واٹر بورڈ کے منیجنگ ڈائرکٹر کی جانب سے ایسے بے بنیاد دعووں کا کوئی جواز نہیں ہے۔