وینا ملک جیون کے نئے سفر پر گامزن

31 دسمبر 2013

فرزانہ چودھری
کسی شاعر نے کیا خوب کہا ہے کہ ”دلہن بنتی ہیں نصیبوں والیاں“ یہ حقیقت ہے کہ سہاگن بننا کسی بھی عورت کے لئے ایک بہت بڑا اعزاز ہوتا ہے کیونکہ زندگی میں یہ گھڑیاں نصیب سے آتی ہیں اور وہ سہاگن دنیا کی خوش قسمت ترین عورت ہوتی ہے جو پیا من بھائے۔ اسی لئے تو کہتے ہیں دُلہن وہی جو پیا من بھائے۔ اداکارہ وینا ملک نے بھی 25 دسمبر کو حقیقی دلہن بن مقصد حےات کی تکمےل کی ۔ ان کا شمار بھی ان دلہنوں مےں کےا جاتا ہے جو پیا من بھائے کیونکہ ان کے شوہر اسد بشیر خان خٹک بھی ان کو اپنی شریک حیات بنا کر پھولے نہیں سما رہے ہےں۔ ان کا کہنا ہے کہ ”وینا کو پا کر میری دیرینہ خواہش کی تکمےل ہوئی۔ میری خواہش ایک ایسی شریک حیات کی تھی کہ جو مجھے بہت پیار کرے، میرا بہت خیال رکھے ، میرا پےار اس کی کمزوری ہو اور سب سے بڑھ کر میرے والدین کی عزت کرے۔ وینا ملک میں وہ تمام خوبیاں موجود ہیں جو اےک آئےڈےل بےوی مےں ہوتی ہےں ایک آدمی کو اور کیا چاہئے ہوتا ہے۔ وینا میرے دل کی شہزادی ہےں“
پاکستان فلم انڈسٹری کی 65 سالہ تاریخ میں صرف گنی چنی شادیاں ہیں جو فنکاروں نے دھوم دھام سے کی ہیں۔ ماضی کی نسبت حال میں ان کی تعداد زیادہ ہے۔ ریما خان کے بعد وینا ملک نے بھی شوبز کی دنیا سے ہٹ کر شادی کی ہے۔ لالی وڈ اور بالی وڈ میں اپنی فنی صلاحیتوں کے بل بوتے پر مقبولیت حاصل کرنے والی فنکارہ وینا ملک نے دبئی کے بزنس مین اسد بشیر خان خٹک سے نکاح کیا تو یہ خبر جنگل میں آگ کی طرح پھیل گئی۔ ان کا نکاح 25 دسمبر کو دبئی کی عدالت میں ہوا۔ اس موقع پر وینا اور اسد کے گھر والے بھی موجود تھے۔ نکاح کے بعد رشتے داروں، دوستوں اور میڈیا کو ظہرانے پر مدعو کیا گیا۔ ظہرانے کا اہتمام لیجنڈ سٹیٹ ہاﺅس دبئی کریکر میں کیا گیا ۔
وینا ملک ان دنوں دبئی میں ہیں۔ ان سے انٹرویو کرنے کے لئے ہم نے ان کے انٹرنیشنل پی آر منیجر سہےل راشد سے رابطہ کیا اور انہوں نے انٹرویو کے لےے ہمارا وینا ملک سے رابطہ کرواےا۔ وینا ملک سے جو خصوصی گفتگو ہوئی وہ قارئین کی نذر ہے۔
وینا ملک نے بتایا ” چٹ منگنی پٹ بیاہ کی وجہ یہ ہے کہ میری والدہ بیمار ہیں۔ وہ دبئی علاج کے آئی ہوئےں ہےں۔ میرے والد اور اسد بشیر کے والد دونوں فوج میں تھے اور دونوں دوست ہےں۔ فیملی فرینڈز ہونے کی وجہ سے ہماری فیملیز ایک دوسرے کو بہت اچھی طرح جانتی ہیں۔ مےری طرح اسد کو بھی شوبز کی دنیا سے لگاﺅ ہے۔ ےہی مشترک چیز ہمارے درمیان روابط کا ذریعہ بنی۔ اسد بشیر کی فیملی بہت ہی اچھی ہے۔ سب پڑھے لکھے اور صاحب حیثیت لوگ ہیں۔ میری والدہ کی خواہش تھی کہ میں اب شادی کر لوں۔ دونوں کے والدین اس رشتے پر رضامند تھے۔ میں جب اسد سے ملی تو مجھے ان سے بات چیت کرکے ان کے خیالات کے بارے میں جان کر یہ احساس ہوا کہ اسد میرے لئے ہی بنے ہیں۔ میں جس مسٹر رائٹ کی تلاش میں تھی وہ مسٹر رائٹ اسد بشےر ہی ہےں۔ حقیقت ےہ ہے کہ جس عمر میں لڑکیاں اپنے جیون ساتھی کے بارے میں سوچتی ہیں کہ ان کا شریک سفر کیسا ہونا چاہئے تو میرے ذہن میں بھی جیون ساتھی کی ایک تصویر سمائے ہوئے تھی۔ میں اکثر خوابوں میں اپنے جیون ساتھی کا جو دھندلا سا چہرہ دیکھتی تھی جب اسد بشیر سے ملی تو میرے خوابوں میں آنے والی وہ دھندلی تصویر اسد بشیر کی شکل مےں صاف دکھائی دی اس لئے کہہ سکتے ہیں۔ اسد بشیر میرے خوابوں کے شہزادے نکلے۔ چند گھنٹوں مےں ہی ہمارے درمیان ذہنی ہم آہنگی ہو گئی۔ میں خود کو دنیا کی خوش قسمت ترین لڑکی سمجھتی ہوں کہ جس نے جس چیز کی بھی خواہش کی اللہ تعالیٰ نے وہ پوری کی۔ شادی زندگی کا ایک اہم فیصلہ ہوتا ہے۔ مجھے خوشی اس بات کی ہے کہ والدین کی پسند میری پسند بنی اور یہ پہلی نظر کی پسند مےرے دل مےں گھر کرکے میرا مقدر بن گئی۔
حق مہر کے حوالے سے وینا نے بتایا ”میرا حق مہر 50 لاکھ ڈالر لکھا گیا ہے اور اسد نے بخوشی اتنا حق مہر لکھا ہے۔ اسد سے شادی کرنے کے بعد میں مکمل ہو گئی ہوں۔ اسد نے میری ہر خواہش کا احترام کیا ہے۔ اگلے ماہ ہم دونوں اپنی فیملیز کے ہمراہ عمرہ کرنے جا رہے ہیں۔ اس کے بعد امریکہ میں نکاح کی خوشی مےں تقریب ہو گی۔ یہ تقرےب بھی میری خواہش پر ہو رہی ہے کیونکہ میں چاہتی تھی کہ میں امرےکن شادی کا وائٹ ڈرےس پہنوں“
اپنے شوہر اسد بشیر خان خٹک کے حوالے سے وینا نے بتایا ”اسد سٹیل مل کے کاروبار سے منسلک ہیں ان کی اپنی سٹےل مل ہے۔ وہ ساﺅتھ سٹیل مل میں کام بھی کرتے رہے ہیں۔ ان کی مل کا سریا آل آف دا ورلڈ جاتا ہے“
شوبز کی دنیا سے منسلک رہنے کے حوالے سے وینا نے بتایا ”اسد شوبز لور ہیں۔ ان کو گائیکی کا شوق ہے ان کے گانوں کا ایک البم ” AAZMA LAY“ ریلیز ہو چکا ہے۔ ہم دونوں ہی فنکار ہیں اور شوبز کی دنیا سے محبت کرتے ہیں۔ اس لئے شادی کے بعد ان کو میرے شوبز دنیا سے منسلک رہنے پر کوئی اعتراض نہیں ہے“
وینا نے بتایا ”میری شادی کی سب سے بڑی تقریب پاکستان میں ہو گی۔ میں اپریل یا مئی 2014ءمیں اس تقریب کے لئے آﺅں گی۔ اس تقریب میں اپنے بالی ووڈ کے دوستوں کو بھی مدعو کروں گی۔ اپنی شادی کی اس تقریب کو یادگار بنانے کی خواہش ہے“
وینا نے بتایا نکاح کی تقریب میں ہم دونوں نے جو لباس زیب تن کیا وہ ہم دونوں نے ایک دوسرے کی پسند سے تےار کرواےا تھا۔ ہم نے نکاح کی انگوٹھی بھی اکٹھے پسند کی۔ ہم دونوں ایک دوسرے کی خواہش کا احترام کرتے ہیں اور اپنی ازدواجی زندگی کو خوشگوار اور آئیڈیل بنانے کے خواہاں ہیں۔ میں اپنے پرستاروں سے بھی یہی کہوں گی کہ وہ میری خوش گوار ازدواجی زندگی کے لئے اللہ سے دعا کرتے رہےں۔
وینا ملک اور اسد بشیر خان خٹک کے نکاح میں شرکت کے لئے وینا کی بہن، بہنوئی اور بھائی خصوصی طور پر دبئی گئے جبکہ ان کے والدین پہلے سے ہی دبئی میں موجود تھے۔ دولہا اسد کے گھر والوں نے بھی نکاح میں بھرپور شرکت کی۔ اسد کو اپنی بہن کے بچوں سے بہت محبت ہے۔ انہوں نے نکاح کے بعد کمرہ عدالت سے نکلتے ہی اپنی بہن کے بیٹے کو گود میں اٹھا لیا۔ ایک مرتبہ میڈیا کے ذہن میں بات آئی کہ یہ شاید اسد بشیر کے بچے ہیں۔ معلوم کرنے پر پتہ چلا کہ یہ ان کی بہن کے بچے ہیں۔ اسد کی وینا ملک سے پہلی شادی ہے۔
وینا ملک اپنی فنی صلاحیتوں کی بدولت لالی وڈ اور بالی وڈ میں مقبولیت حاصل کر چکی ہیں۔ انہوں نے اپنے فنی کیرئر کا آغاز ماڈلنگ سے کیا۔ ان کو ٹی وی پر ہدایتکار جاوید فاضل نے متعارف کروایا۔ ان کا پہلا لانگ پلے ”لیکر“ تھا۔ ابرارالحق کے مقبول گانے ”جٹ چڑھیا کچہری“ میں ان کی پرفارمنس کو بہت پسند کیا گےا۔ جب وہ سلور سکرین پر جلوہ گر ہوئیں تو وہاں بھی اپنی صلاحیتوں کا لوہا خوب منوایا۔ ان کی جو فلمیں سپر ہٹ ہوئیں ان میں شہزاد گل کی فلم ”تیرے پیار میں“ جاوید شیخ کی فلم ”یہ دل آپ کا ہوا“ ہدایتکار عجب گل کی فلم، کیوں تم سے اتنا پیار ہے“ ہدایتکار ریما خان کی فلم ”کوئی تجھ سا کہاں“ اور شہزاد رفیق کی فلم ”محبتاں سچیاں“ قابل ذکر ہیں۔ انہوں نے بالی وڈ کی پنجابی فلم ”پنڈی دی کڑی“ میں ہیروئن کا کردار نبھایا۔ ان کی یہ فلم بھی سپر ہٹ ہوئی۔ وینا ملک کو شہرت کی اس منزل تک پہنچنے کے لئے بڑی محنت اور لگن سے کام کرنا پڑا۔ اس شہر نگاراں میں قدم رکھنے اور پھر اس میں کامیابیوں کے جھنڈے گاڑنے تک اداکارہ وینا ملک نے دن رات محنت کی ہے۔ وینا ملک نے پروگرام ”ہم سب امید سے ہیں“ میں کام کرکے اپنی فنی صلاحیتوں کا نہ صرف لوہا منوایا بلکہ خوب شہرت بھی حاصل کی۔ اس کے بعد وہ اےک نجی ٹی وی چےنل کی ”مس دنےا“ بھی بنیں۔ ان کو بین الاقوامی شہرت یافتہ ہالی وڈ کی رئیلٹی شو ”بگ باس“ میں بھی پرفارم کرنے کا موقع ملا جس سے ان کی مقبولیت کا گراف بلند ہوا اس کے بعد ان کو بالی وڈ فلموں میں کام کی پیشکش ہوئی۔ انہوں نے کئی ایک بالی وڈ فلموں میں بھی کام کیا ہے۔ انہوں نے اپنا ذاتی پروڈکشن ہاﺅس بھی بنایا جس کے زیر اہتمام انہوں نے ایک ٹی وی سیریل ” الجھے دھاگے“ بھی بنایا۔ وےنا کے بطور گلوکارہ دو گانے” ڈرامہ کوئےن“ اور” رم رم“ کے وےڈےو بھی رےلےز ہوچکے ہےں جسے موسےقی دلداوں نے بہت پسند کےا۔