افغانستان میں قیام امن کے لئے ایران کی پیشکش کو خوش آمدید کہیں گے: دفتر خارجہ

30 اکتوبر 2015 (16:58)

ہفتہ وار بریفنگ کے دوران ترجمان دفتر خارجہ قاضی ایم خلیل اللہ نے کہا کہ بین الاقوامی برادری بھارتی انتہاپسند تنظیم شیو سینا کی کارروائیوں کا نوٹس لے اور اس حوالے سے پاکستان بارہا اپنے تحفظات کا اظہار کرچکا ہے،خطے میں استحکام کے لئے ضروری ہے کہ بھارت اسلحہ کی دوڑ سے اجتناب کرے۔ ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ بھارت کی جانب سے زلزلہ متاثرین کی امداد کی پیشکش کے باوجود دونوں ممالک کے باہمی مسائل کو پس پشت نہیں ڈال سکتے، مسئلہ کشمیر سمیت دیگر تصفیہ طلب امور کا حل ہونا ضروری ہے۔
ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ پاکستان اور سعودی عرب کی مشترکہ جنگی مشقیں انسداد دہشتگردی کی تیاریوں کے سلسلے میں ہیں۔ دوسری جانب پاکستان اور روس کے تعلقات انتہائی اہمیت کے حامل ہیں جبکہ روسی صدر کے دورہ پاکستان کے لئے انہیں خوش آمدید کہیں گے۔
قاضی ایم خلیل اللہ نے کہا کہ زلزلہ کے بعد اقوام متحدہ سمیت کئی ممالک نے امداد کی پیشکش کی، جسے قبول کرنے کے حوالے سے ابھی فیصلہ نہیں کیا گیا۔ اس موقع پر انہوں نے کہا کہ پاکستان افغانستان مین امن کا خواہشمند ہے اور افغانستان میں قیام امن کے لئے ایران کی پیشکش کو خوش آمدید کہیں گے۔

نفس کا امتحان

جنسی طور پر ہراساں کرنے کے خلاف خواتین کی مہم ’می ٹو‘ کا آغاز اکتوبر دو ...