سی دی ڈبلیوپی اجلاس 512 ارب کے ترقیاتی منصوبے منظور نیلم جہلم سمیت 3 پرا جیکٹ امکینک کے سپرد

30 اکتوبر 2015

اسلام آباد (آن لائن + نوائے وقت رپورٹ) سنٹرل ڈویلپمنٹ ورکنگ پارٹی ( سی ڈی ڈبلیو پی ) نے تعلیم، توانائی، ٹرانسپورٹ اینڈ کمیونیکیشن ریلوے کے 512 ارب روپے کے 20 ترقیاتی منصوبوں کی منظوری دیدی۔ جبکہ تین منصوبوں کو منظوری کیلئے قومی اقتصادی کونسل کو بھیج دیا گیا۔ وفاقی وزیر ترقی و منصوبہ بندی احسن اقبال کی زیر صدارت اجلاس ہوا، تعلیم، توانائی، ٹرانسپورٹ اینڈ کمیونیکیشن، ریلوے انڈسٹری اینڈ کامرس، فزیکل پلاننگ اینڈ ہائوسنگ اور پانی کے منصوبوں کی منظوری دی گئی۔ منصوبوں میں 18546 ملین روپے کے اسلام آباد الیکٹرک سپلائی کمپنی، ایڈوانس میٹرنگ انفراسٹرکچر پروجیکٹ پر 30597 ملین روپے اور 444034 ملین روپے کے نیلم جہلم ہائیڈرو الیکٹرک پروجیکٹ کو ایکنک کو بھجوانے کی ہدایت کی ہے اجلاس میں منظور کئے گئے منصوبوں میں بلوچستان میں 146.37 ملین روپے کے اساتذہ کی ٹریننگ انسٹی ٹیوشن پاکستان اٹلی کے مابین 108.4 ملین روپے کے ٹیکنیکل سپورٹ یونٹ کا منصوبہ شامل ہے۔ اس کے علاوہ پی ایچ ڈی مکمل کرکے واپس آنے والے طالبعلموں کے لئے ٹیکنالوجی ڈویلپمنٹ فنڈ کا منصوبہ جس پر 3792.532 ملین روپے لاگت آئے گی اس کے علاوہ بلوچستان میں سبی بلوچستان کے پہلے حصہ کی تعمیر پر 584.363 ملین روپے میں سے 190.617 ملین روپے کی منظوری بھی دے دی۔ یونیورسٹی آف آزاد جموں وکشمیر مظفر آباد کے کیمپس کنگ عبداللہ کے لئے سہولیات کے لئے 574.139 ملین روپے منظور کرلئے گئے۔ اس کے علاوہ کلچرل، ایکسچینج پروگرام اور فاطمہ جناح ویمن یونیورسٹی راولپنڈی کیمپس 11 کی تعمیر پر بالترتیب 709.218 ملین روپے اور 953.445 ملین روپے کی منظوری دی گئی بلوچستان اور فاٹا کے لئے اعلیٰ تعلیم پر 2994.272 ملین روپے خرچ ہونگے تعمیری منصوبوں میں متکنڈ یس کلکفانی روڈ ڈسٹرکٹ ڈیرہ بگٹی روڈ کی تعمیر پر 144.490 ملین روپے ڈیرہ بگٹی میں رکہنی بیکر روڈ کی تعمیر پر 28.653 ملین روپے اور 260 پسنجر کوچز کو 110 اے سی ٹو فور ڈی سی وولٹ سے 220 وولٹ میں تبدیل کرنے پر چار سو ملین روپے خرچ ہوں گے جس میں 113.090 روپے ایف ای سی کے شامل ہیں مزید منظور کئے گئے منصوبوں میں ایری گیشن سسٹم کو بچانے کے لیے انڈس دریا پر 532.46 ملین اور قومی نصاب کونسل سیکرٹریٹ کی سو ملین سمیت تین مزید منصوبوں کی منظوری بھی دے دی۔ بلوچستان کے ایلیمنٹری اساتذہ کا تربیتی منصوبہ، اٹامک انرجی کمشن کے ایبٹ آباد ہسپتال کی تعمیر کا منصوبہ، ایچ ای سی میں پی ایچ ڈی سکالرز کا تربیتی منصوبہ، سبی یونیورسٹی کے قیام کا منصوبہ بھی منظور کیا گیا۔ سمارٹ میٹرز نصب کرنے کا منصوبہ بھی حتمی منظوری کیلئے ایکنک کو بھجوا دیا گیا۔ سمارٹ میٹرز آئیسکو اور لیسکو میں نصب کئے جائیں گے۔