8 سال سے نادرا میں تعینات افغان باشندے کی برطرفی کا حکم

30 اکتوبر 2015

اسلام آباد (آن لائن) چیئرمین نادرا عثمان مبین نے 8 سال سے نادرا میں تعینات افغان باشندے کی برطرفی کے احکامات جاری کرتے ہوئے ذمہ دار افراد کے خلاف کارروائی کا حکم دے دیا۔ تفصیلات کے مطابق جمعرات کے روز چیئرمین نادرا نے کارروائی عمل میں لاتے ہوئے 8 سال سے نادرا کے قومی ادارے میں تعینات افغان باشندے روح اللہ کو برطرف کر دیا۔ روح اللہ 23 اکتوبر 2007ء کو جعلسازی اور نادرا کے حکام کی ملی بھگت سے رشوت دے کر قومی ادارے میں تعینات ہوا تھا جبکہ افغان باشندہ روح اللہ باجوڑ ایجنسی میں نادرا کے رجسٹریشن سنٹر میں جونیئر ایگزیکٹو تعینات تھا اور اس نے اپنے رشتہ داروں سمیت سینکڑوں افغان باشندوں کے شناختی کارڈ بنوائے جن میں سے کچھ افراد پاکستان مخالف سرگرمیوں میں بھی ملوث رہے ہیں۔چیئرمین نادرا نے اس حوالے سے نادرا کے ذمہ داران کے خلاف کارروائی کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ نادرا قومی ادارہ ہے اور اس میں موجود کالی بھیڑوں کو نکال کر اس کو پاک کیا جائے گا تاکہ مستقبل میں اس ادارے کو غلط سرگرمیوں کے لئے استعمال ہونے سے روکا جا سکے۔