دہشت گردی کے خاتمہ کے لئے بندوق کیساتھ سماجی ، معاشی انصاف کی گولیاں بھی ضروری ہیں: شہباز شریف

30 اکتوبر 2015

لاہور (خصوصی رپورٹر) وزیراعلی پنجاب محمد شہبازشریف نے امریکی قونصلیٹ لاہور میں امریکہ کے قومی دن کے حوالے سے منعقدہ تقریب میںمہمان خصوصی کی حیثیت سے شرکت کی اور امریکی قونصل جنرل زیچرے ہارکن رائیڈر کے ساتھ مل کر کیک کاٹا۔ شہبازشریف نے امریکہ کے 239 ویں قومی دن کی تقریبات پر امریکی عوام کو مبارکباد دی اورکہا پاکستان اور امریکہ کے مابین دیرینہ دوستانہ تعلقات ہیں۔ مختلف ادوار میں پاکستان امریکہ تعلقات میں اونچ نیچ آتی رہی تاہم دوستی کا یہ رشتہ 6دہائیوں پر محیط ہے نوازشریف کے دور میں پاکستان امریکہ تعلقات باہمی احترام ،ترقی اورخوشحالی کے اصولوں پر استوار ہوئے ہیں- وزیراعظم کا حالیہ دورہ امریکہ انتہائی کامیاب رہا دونوں ملکو ںنے ترقی اور خوشحالی کے مواقع سے استفادہ کرنے پر اتفاق کیاہ امریکہ پاکستان کے مختلف شعبوں کی ترقی میں بھرپور تعاون کر رہا ہے-تعلیم ،صحت اور توانائی کے شعبوں میں امریکی تعاون قابل قد ر ہے-مظفر گڑھ میں امریکہ کے تعاون سے پاور پلانٹ کو دوبارہ چلایا جا رہا ہے انہوں نے کہا پاکستان کو توانائی بحران کے ساتھ دہشت گردی کے بڑے چیلنج کا سامنا ہے-پاکستان کی بہادر افواج اور زندگی کے ہر طبقے نے دہشت گردی کے خلاف لازوال قربانیاں دی ہیں-دہشت گردی کے خلاف جنگ میں 50ہزار سے زائد پاکستانی اپنی قیمتی جانوں کا نذرانہ پیش کر چکے ہیں۔ دہشت گردی کے خاتمہ کیلئے بندوق کی گولی کے ساتھ سماجی ومعاشی انصاف کی گولیاں بھی ضروری ہیں- روز گار کے مواقع بڑھا کر او رغربت میں کمی کر کے انتہا پسندانہ رحجانات کا خاتمہ کیا جا سکتاہے۔ ضرب عضب آپریشن کے ذریعے دہشت گردوں اوران کے سہولت کاروں پر کاری ضرب لگائی۔ قوم ملک سے دہشت گردی کے خاتمے کا عزم کر چکی ہے-پاکستان کی سیاسی وعسکری قیادت دہشت گردی کے خاتمے کے لئے ایک صفحہ پر ہے۔ امریکن قونصل جنرل زیچرے ہارکن رائیڈر نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا پاکستان کے عوام اور سکیورٹی اداروں نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں لازوال قربانیاں دی ہیں۔ وزیراعلیٰ شہبازشریف انتہائی محنت سے عوامی منصوبوں کو آگے بڑھا رہے ہیں۔ ارکان اسمبلی سے گفتگو کرتے ہوئے شہباز شریف نے کہا دہشت گردی اور توانائی بحران کاخاتمہ مسلم لیگ(ن) کی حکومت کی اولین ترجیح ہے۔ دہشت گردوں اور ان کے سہولت کاروں کے خلاف بھرپور کارروائی جاری ہے اور نیشنل ایکشن پلان پر موثر عملدرآمد سے دہشت گردوں کی کمر توڑ دی گئی ہے۔ ملک سے دہشت گردی و انتہاپسندی کے مکمل خاتمے تک چین سے نہیں بیٹھیں گے۔ملاقات کرنے والوں میں ایم این اے روحیل اصغر او رایم پی اے غزالی بٹ شامل تھے۔ ذرائع نے بتایا شہباز شریف نے روحیل اصغر اور سلیم غزالی بٹ سے بلدیاتی انتخابات کے حوالے سے ان کے حلقوں کی صورت حال پر تبادلہ خیال کیا اور انہیں تلقین کی پارٹی کے نامزد امیدواروں کے ساتھ چلیں اور انہیں کامیاب کروائیں،آزاد حیثیت میں کھڑے ہونے والے پارٹی کے نادان دوست ہیں ان کی نادانی پارٹی کیلئے فائدہ مند ثابت نہیں ہو سکتی۔معلوم ہوا ہے دونوں ممبران اسمبلی نے شہباز شریف کو یقین دلایا پارٹی امیدواروں کے خلاف نہیں چلیں گے۔ علاوہ ازیں وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف کی زیرصدارت اعلیٰ سطح کا اجلاس منعقد ہوا،جس میں صوبے میں فلاح عامہ کیلئے شروع کیے جانے والے منصوبوں پر پیش رفت کا جائزہ لیاگیا۔ اس موقع پر شہبازشریف نے کہا شفافیت، اعلیٰ معیار اور برق رفتاری سے منصوبوں کی تکمیل پنجاب حکومت کا طرہ امتیاز ہے۔میٹروبس پراجیکٹس کے ذریعے عام آدمی کو ٹرانسپورٹ کی جدید، معیاری اورباکفایت سہولتیں فراہم کی جارہی ہیں۔ مزید برآں شہباز شریف نے ترکی کے قومی دن کے موقع پر ترک صدر رجب طیب اردگان اور ترک عوام کو مبارکباد دی ہے۔ وزیراعلیٰ نے اپنے تہنیتی پیغام میں کہا ترکی نے چند برسوں میں ترقی کے مراحل تیزی سے طے کئے ہیں۔ جمہور ی نظام کے استحکام اور پالیسیوں کے تسلسل سے ترکی چند برس کے دوران دنیا کا ایک خوشحال اور ترقی یافتہ ملک بن چکا ہے۔ ترکی نے صدر رجب طیب اردگان کی ولولہ انگیز لیڈرشپ کے باعث غیرمعمولی ترقی کی ہے جو ترقی پذیر ممالک کیلئے رول ماڈل ہے پاکستان کے عوام اپنے برادر ملک ترکی کی بے مثال ترقی پر فخر کرتے ہیں اور ترکی کی کامیابی اور عالمی برادری میں ترکی کے بڑھتے ہوئے اثرو رسوخ پر اس کی بصیرت افروز قیادت کو سراہتے ہیں۔ علاوہ ازیں وزیراعلیٰ کی زیرصدارت یہاںاعلی سطح کا اجلاس ہوا،جس میںپنجاب میں کاروباری مواقعوں کے حوالے سے بین الاقوامی سیمینار کے انتظامات کاجائزہ لیاگیا۔ دو روزہ بین الاقوامی سیمینار نومبر کے آغاز میں لاہور میں ہوگا، جس میں بیرون ملک سے سرمایہ کار کمپنیاں اورعہدیداران شرکت کریں گے جبکہ پاکستان سے بھی سرمایہ کار شریک ہوںگے شہباز شریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بہترین پالیسیوں اورسازگار ماحول کے باعث پنجاب سرمایہ کاری کامرکز بن چکاہے بین الاقوامی سیمینار کے انعقاد سے غیر ملکی سرمایہ کاروں کو پنجاب کے مختلف شعبوں میں سرمایہ کاری کی جانب راغب کیا جا سکے گا اور یہ سیمینار پنجاب میں غیر ملکی سرمایہ کاری کے فروغ کیلئے معاون ثابت ہوگا۔