مصیبت کی گھڑی میں پورا پاکستان زلزلہ متاثرین کے ساتھ ہے: صدر ممنون‘ زخمیوں کی عیادت

30 اکتوبر 2015

خار (آئی این پی+ اے پی پی) صدر مملکت ممنون حسین نے کہا ہے کہ وفاقی و صوبائی حکومت مشکل کی اس گھڑی میں زلزلہ زدگان کے ساتھ ہے، زلزلہ متاثرین کی مکمل بحالی تک چین سے نہیں بیٹھیں گے، زندہ قومیں مشکل وقت میں متحد ہو کر آفات کا مقابلہ کرتی ہیں، زلزلے سے متاثرہ علاقوں میں امدادی کام سیاسی اور گروہی مفادات سے بالاتر ہو کر کئے جا رہے ہیں، حکومتی اداروں اور فوج نے وقت ضائع کئے بغیر امدادی کاموں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیا۔ وہ جمعرات کو باجوڑ ایجنسی کے علاقے خار میں زلزلہ متاثرین سے خطاب کر رہے تھے۔ صدر مملکت نے کہا کہ قبائلیوں نے قدرتی آفت کا مقابلہ بہادری اور جرات سے کیا، مصیبت کی گھڑی میں پورا پاکستان زلزلہ متاثرین کے ساتھ ہے۔ سرکاری اداروں کے بروقت متحرک ہونے سے نقصانات کم ہو جاتے ہیں۔ قبل ازیں صدر نے باجوڑ ایجنسی کے زلزلہ سے متاثرہ علاقوں کا دورہ کیا اور متاثرین کے ساتھ ملاقات کی۔ صدر نے خار میں ضلعی ہیڈ کوارٹرز ہسپتال کا بھی دورہ کیا اور زخمیوں کی صحت دریافت کی۔ اس موقع پر صدر کو باجوڑ ایجنسی میں زلزلہ سے ہونے والے نقصانات کے بارے میں آگاہ کیا گیا۔ اس موقع پر انہیں بتایا گیا کہ زلزلے کے باعث باجوڑ ایجنسی میں 22 افراد جاں بحق اور 159 زخمی ہوئے جبکہ 8120 مکانات، 32 سکولوں اور 12 ہسپتالوں کو بھی نقصان پہنچا۔ صدر کو بتایا گیا کہ متاثرہ خاندانوں میں 864 خیمے، 900 کمبل اور کھانے پینے کی اشیاء بھی تقسیم کی گئی ہیں۔ ابتدائی امداد کے تحت جاں بحق ہونے والوں کے قانونی ورثاء کو فی کس 60 ہزار روپے جبکہ زخمیوں کو فی کس 10 ہزار روپے ادا کئے گئے ہیں۔ خیبر پی کے کے گورنر سردار مہتاب احمد خان اس دورے کے دوران صدر کے ہمراہ تھے۔