مشرف کو پارٹی صدارت سے ہٹانے کی درخواست، ہائیکورٹ نے جلد سماعت کی استدعا مسترد کر دی

30 مارچ 2018

لاہور (وقائع نگار خصوصی) لاہور ہائیکورٹ نے سابق صدر پرویز مشرف کو پارٹی صدارت کے عہدے سے ہٹانے کے لیے دائر درخواست کی جلد سماعت کی استدعا مسترد کر دی۔ جسٹس شاہد کریم نے سماعت کی۔ عدالت کے رو برو درخواست گزار مقامی وکیل محمد آفاق ایڈو,کیٹ نے موقف اختیار کیا کہ آئین کے آرٹیکل 62،63 کے تحت پرویز مشرف کو 2013 کے الیکشن میں نااہل قرار دیا گیا، پولیٹیکل پارٹیز آرڈر اینڈ رولز کے تحت نااہل شخص پارٹی صدر نہیں بن سکتا، سپریم کورٹ نواز شریف کو بھی اسی قانون کے تحت پارٹی صدارت سے نااہل کر چکی ہے، بطور پارٹی صدر مشرف کی جانب سے کئے گئے تمام فیصلے کالعدم قرار دئیے جائیں۔ انہوں نے استدعا کی کہ عدالت پرویز مشرف کو پارٹی صدارت کے عہدے سے نااہل کرنے کا حکم دے ،آل پاکستان مسلم لیگ کے تمام ممبران اسمبلی کو بھی نااہل قرار دیا جائے، عدالت پیمرا کو پرویز مشرف کی تقاریر نشر کرنے سے روکے، معاملے کی حساسیت کے پیش نظر کیس کی جلد سماعت کی جائے۔
درخواست/ مسترد