آئی سی سی کا پاک ویسٹ انڈیز سیریز مانیٹر کرنے کا فیصلہ‘ 2 سینئر افسران پاکستان آئیں گے

30 مارچ 2018

دبئی /کراچی (آئی این پی)پاکستان اور ویسٹ انڈیز کی ٹی ٹوئنٹی سیریز کے لیے انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی)کے صدر ششانک منوہر اور چیف ایگزیکٹیو ڈیوڈ رچرڈسن کراچی نہیں آئیں گے تاہم آئی سی سی نے اپنے دو سینئر افسران کو سیریز مانیٹر کرنے کیلئے پاکستان بھیجنے کا فیصلہ کیا ہے۔ذرائع کے مطابق آئی سی سی کے جنرل منیجر کرکٹ جیف ایلا ڈائس اور سنیئر منیجر امپائرز اور ریفریز ایڈرین گریفتھ پاکستان کرکٹ بورڈ کی دعوت پر کراچی آرہے ہیں۔پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین نجم سیٹھی نے بتایا کہ ویسٹ انڈیز کا شمار ٹیسٹ کھیلنے والے ملکوں کی صف اول کی ٹیموں میں ہوتا ہے اور اس کے دورے سے پاکستان کرکٹ کو بہت فائدہ ہوگا۔انہوں نے کہا کہ ویسٹ انڈیز کے دورہ پاکستان سے انٹرنیشنل کرکٹ کی بحالی میں مدد ملے گی۔نجم سیٹھی نے دعوی کیا کہ پاکستان میں اب حالات تبدیل ہوچکے ہیں، پاکستان میں انٹر نیشنل کرکٹ بحال ہورہی ہے، جائیلز کلارک پاکستان کے بارے میں جو باتیں کرکے گئے ہیں اس سے پاکستان کرکٹ کو مستقبل میں فائدہ پہنچے گا۔ ویسٹ انڈیز کی ٹیم آرہی ہے اور اس میں کوئی شک نہیں ، جو کہتے ہیں پورا کرکے دکھاتے ہیں اور خوشی ہے کہ انٹرنیشنل ٹیمیں پاکستان آ رہی ہیں،بھارت سے بھی معاملات دیکھ رہے ہیں اور بہت جلد خوشخبری بھی ملے گی،امریکہ میں تین ملکی سیریز کے لئے بنگلہ دیش اور ویسٹ انڈیز کے ساتھ بات چیت جاری ہے۔پاکستان ویسٹ انڈیز سیریز کے لوگو کی لاہور میں رونمائی کے موقع پر پریس کانفرنس کرتے ہوئے نجم سیٹھی نے کہا کہ ویسٹ انڈیز کی ٹیم پاکستان آرہی ہے ، کرکٹ ویسٹ انڈیز چاہتا ہے کہ کھلاڑیوں کا اعلان تاخیر سے کیا جائے،انہوں نے کہا کہ پی ایس ایل دنیا کا بڑا برانڈ بن چکا ہے، ہمارا ساتھ دیں اور رہنمائی کریں اچھا لگے گا، ویسٹ انڈیز کی ٹیم 31 مارچ کو دورہ پاکستان کیلئے آئے گی، تینوں میچز کراچی میں یکم، دو اور تین اپریل کو کھیلے جائیں گے۔