کھلاڑیوں کے ’کوڈ آف کنڈکٹ‘ کا تفصیلی جائزے لیا جائے گا، آئی سی سی

30 مارچ 2018

کراچی(اسپورٹس ڈیسک)انٹرنیشنل کرکٹ کونسل کے چیف ایگزیکٹیو نے کہا ہے کہ کھلاڑیوں کے غیر مناسب رویے کی روک تھام کے لیے آئی سی سی کھلاڑیوں کے ضابطہ اخلاق پر وسیع پیمانے پر ریویو کریں گے۔آئی سی سی کی جانب سے یہ اعلان ایسے وقت کیا گیا ہے جب آسٹریلیا کے تین کھلاڑی بال ٹیمپرنگ کرتے ہوئے جنوبی افریقہ کے خلاف ٹیسٹ میچ میں پکڑے گئے۔رچرڈسن نے جمعرات کو میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا ’جو کیپ ٹاؤن میں ہوا اس سے صاف ظاہر ہے کہ اس حوالے سے اقدامات الد لینے کی ضرورت ہے۔‘انھوں نے مزید کہا ’بورڈ کی حمایت سے ہم وسیع پیمانے پر کھلاڑیوں کے رویے اور خاص طور پر ضابطہ اخلاق کے حوالے سے ریویو کریں گے۔‘برطانوی خبر رساں ایجنسی روئٹرز کا کہنا ہے کہ رچرڈسن سابق اور حاضر کھلاڑیوں، آئی سی سی کرکٹ کمیٹی، مارلیبون کرکٹ کلب اور میچ حکام کو اکٹھا کریں گے اور اس بات پر بات چیت کریں گے کہ کیسے کھیل کی روح کو کھلاڑیوں کے ضابطہ اخلاق کا حصہ بنایا جائے۔انھوں نے کہا ’فوری طور پر جو کھلاڑی ذہن میں آ رہے ہیں ان میں ایلن بارڈر، انیل کمبلے، شون پولک، کورٹنی والش، رچی رچرڈسن ہیں جنھوں نے کرکٹ کو جذبے کے ساتھ کھیلا۔‘رچرڈسن نے مزید کہا کہ کرکٹ کمیٹی اپنح اجلاس میں اس پر بھی بحث کرے گی کہ کیسے انضباطی کوڈ کی خلاف ورزی پر یکساں سزا دی جا سکے۔آئی سی سی کے چیف ایگزیکٹیو نے کہا کہ ضابطہ اخلاق تو ہے لیکن اس میں ابہام کی وجہ سے امپائرز اور ریفریوں کو کوڈ کے اطلاق میں مشکل ہوتی ہے۔