پی ایچ ایف ایگزیکٹو بورڈ نے خالد بشیر کو عہدے سے ہٹانے کی منظوری دیدی

30 مارچ 2018

لاہور(سپورٹس رپورٹر) پاکستان ہاکی فیڈریشن کے ایگزیکٹو بورڈ اجلاس نے آئین کی خلاف ورزی کرنے والے ایسوسی ایٹ سیکرٹری خالد بشیر کو عہدے سے ہٹانے کی باقاعدہ منظوری کے ساتھ سیکروٹنی کے بعد جلد نئے الیکشن کرانے کا اعلان کر دیا ہے۔ اس بات کا فیصلہ اسلام آباد میں پی ایچ ایف ایگزیکٹو بورڈ اجلاس میں کیا گیا جس کی صدارت فیڈریشن کے صدر بریگیڈئر (ر) خالد سجاد کھرکھر نے کی۔ اجلاس میں سیکرٹری پی ایچ ایف اولمپیئن شہباز احمد سینئر سمیت چاروں صوبائی سیکرٹری، چیئرپرسن پی ایچ ایف ویمن ونگ خوشبخت شجاعت، نائب صدر پی ایچ ایف محمد سعید خان، ڈائریکٹر آرمی سپورٹس ڈائریکٹوریٹ غلام جیلانی اور ٹیکنوکریٹس میں سید مصدق حسین، نوید عالم اور قاسم خان بھی موجود تھے۔ اس موقع پر ایگزیکٹو بورڈ نے سیکروٹنی کا عمل مکمل کرنے کے بعد جلد نئے الیکشن کرانے کے لیے شیڈول کا اعلان کرنے کی ہدایت کی گئی۔ اجلاس میں پی ایچ ایف کے ایسوسی ایٹ سیکرٹری خالد بشیر کی جانب سے قانون اور آئین کی خلاف ورزی پر ایکشن لیتے ہوئے ان کی رکنیت کو ختم کرنے کا فیصلہ کیا جس کی بورڈ ممبران نے متفقہ طور پر منظوری دی۔ اس موقع پر سیکرٹری پی ایچ ایف شہباز سینئر نے 30 اپریل 2018ء سے صوبائی ہاکی ایسوسی ایشن کے زیر اہتمام ڈسٹرکٹ لیول پر انٹر کلب ہاکی چیمپیئن شپ کرانے کا بھی اعلان کیا۔ علاوہ ازیں کلب ہاکی کی بہتری کے بھی اقدامات اٹھانے کا فیصلہ کیا گیا۔ اس موقع پر دیگر پوائنٹس بھی زیر غور لائے گئے جنہیں صدر پی ایچ ایف کی جانب سے سراہا گیا۔