پمس میں بون میرو ٹرانسپلانٹ کی بندش، سپریم کورٹ کا ازخود نوٹس

30 مارچ 2018

اسلام آباد(نمائندہ نوائے وقت)چیف جسٹس آف پاکستان مسٹر جسٹس میاں ثاقب نثار نے پمزہسپتال کے بون میرو ٹرانسپلانٹ سینٹر کی بندش کا ازخود نوٹس لیتے ہوئے سیکرٹری کیڈ سے معاملے پر تین روز میں رپورٹ طلب کر لی ہے ۔چیف جسٹس نے پمز کے بون میرو ٹرانسپلانٹ سینٹر کی بندش کا ازخود نوٹس متاثرہ بچے کے والدین کی درخواست پر لیا گیا ہے درخواست میں کہا گیا تھا کہ بون میرو سینٹر بند ہونے سے پانچ سو بچے متاثر ہوں گے، تھیلیسیما کے مریض بچوں کا واحد علاج بون میرو ٹرانسپلانٹ ہیدرخواست کے مطابق بون میرو ٹرانسپلانٹ سینٹر کے عملے کو 3ماہ سے تنخواہ بھی نہیں دی گئی، پمز ہسپتال میں بون میرو ٹرانسپلانٹ 10 لاکھ میں ہوتا ہے10 لاکھ میں سے بھی 6 لاکھ روپے بیت المال ادا کرتا ہیوالدین کے مطابق دیگر نجی ہسپتالوں میں بون میرو کا خرچہ 30لاکھ تک آتا ہے درخواست کے مطابق لیور ٹرانسپلانٹ یونٹ بھی پہلے ہی بند کیا جاچکا ہے اور اب کارڈیک سینٹر کو بھی بند کرنے کا اندیشہ ہے مریض بچوں کے والدین کے مطابق سینٹرز کی بندش کا مقصد نجی اسپتالوں کو فائدہ پہنچانا ہے، بعدازاں چیف جسٹس نے معاملے کانوٹس لیتے ہوئے سیکرٹری کیڈ سے تین دن میں رپورٹ طلب کرلی ہے۔