ملک میں 73 کے آئین کے علاوہ کوئی اور ڈاکٹرائن نہیں، سینیٹر مشاہد حسین

30 مارچ 2018

حیدرآباد(نامہ نگار) پاکستان مسلم لیگ کے رہنما سینیٹر مشاہد حسین نے حیدرآباد میں قومی عوامی تحریک کے صدر ایاز لطیف پلیجو سے ان کی رہائش گاہ پر ملاقات کی۔ 10 اپریل کو اسلام آباد میں مسلم لیگ (ن) کی جانب سے منعقد کئے جانے والے قومی سیمینارمیں شرکت کی دعوت دی۔ ملاقات میںملک کی سیاسی صورتحال کے حوالے سے بات چیت کی گئی۔ ملاقات کے بعد میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے مشاہد حسین نے کہا کہ پاکستان میں 1973 کے آئین کے علاوہ کوئی اور ڈاکٹرائن نہیں ہے ہماری بھی یہی ڈاکٹرائن ہے نواز شریف کسی ادارے پر نہیں بلکہ ہونے والے فیصلوں پر بات کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ 10 اپریل کو اسلام آبادمیں ہونے والی قومی کانفرنس میں ووٹ کی عزت و احترام پر بات ہوگی۔ اس موقع پر قومی عوامی تحریک کے صدر ایاز لطیف پلیجو نے کہا کہ ملاقات میں سندھ کے لوگوں کی شکایات اور سند ھ کی موجودہ صورتحال مسلم لیگ ن کی وفاقی حکومت اور نواز شریف کے کردار پر بات چیت ہوئی۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف نے سندھ کے لوگوں کے ساتھ 2012 اور 2013 میں جو وعدے کئے تھے ان تمام وعدوں کو انہوں نے نظرانداز کردیا سندھ میں 12 سے 18 گھنٹے طویل لوڈ شیڈنگ کی جارہی ہے۔ سندھ کا پانی روکا جارہا ہے ۔2 بڑے کینال کھولے گئے ہیں۔ سندھ کے کاشتکاروں اور ہاری پریشان ہیں سندھ میں افغانیوں، بہاریوں، بنگالیوں اور اردو بولنے والوں کو وطن میں بے وطن کیا جارہا ہے۔ سندھ کے وسائل پر سندھ کے لو گوں کاحق تسلیم نہیں کیا جارہا ہے۔ انہوں نے عدلیہ سے مطالبہ کیا کہ غیر جانبدار نگراں حکومت قائم کرکے انتخابات کرائے جائیں۔ علاوہ ازیں رسول بخش پلیجو نے سینیٹر سید مشاہد حسین کی کراچی میں سندھیانی تحریک کی رہنما حور النساء پلیجو کی رہائش گاہ پر ملاقات ہوئی ملاقات میں مشاہد حسین نے رسول بخش کی عیادت کی جب کہ اس موقع پر ملکی او رعالمی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ سی پیک کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے رسول بخش پلیجو نے کہاکہ چین او رپاکستان کا یہ اقدام بروقت اور تاریخی ہے تاہم ہماری اطلاعات کے مطابق ہر ترقیاتی منصوبے کی طرح اس منصوبے میں بھی سندھیوں کو نظرانداز کیا جارہا ہے تمام پروجیکٹس میں سندھی لوگوں کو اولیت کی بنیاد پر ملازمتیں دی جائیں سینیٹر مشاہد حسین نے ملاقات کے بعد میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے بتایا کہ آج مجھے اپنے دیرینہ دوست ، ادیب، بین الاقوامی شخصیت انقلابی رہنما سے ملاقات کرکے بہت خوشی ہورہی ہے رسول بخش پلیجو نے 10 اپریل کو اسلام آباد میں ہونے والی ‘‘ووٹ کا تقدس، قانون و پارلیمنٹ کی بالادستی اور جمہوریت ‘‘ کے زیر عنوان کانفرنس میں شرکت کروں گا۔رسول بخش پلیجو نے قبول کرلی اس موقع پر حو رالنسا پلیجو، شبنم پلیجو، نرگس پلیجو، ڈاکٹر نعیم پلیجو، رکن الدین میرانی، راحیل بھٹو اور دیگر بھی موجود تھے۔
مشاہدحسین سید