عالمی ادارے نے پاکستانی معیشت کیلئے خطرے کی گھنٹی بجادی

30 مارچ 2018

کراچی(این این آئی)عالمی ادارے نے پاکستانی معیشت کیلئے خطرے کی گھنٹی بجادی- بلوم برگ کی رپورٹ کے مطابق ایشیائی ممالک میں پاکستان کے زرمبادلہ کے ذخائر سب سے زیادہ تیزی سے گر رہے ہیں اور یہ سلسلہ جاری رہا تو اس کے ذخائر کمبوڈیا سے بھی کم ہو جائیں گے جس کی معیشت پاکستان کے مقابلے میں 10 گنا چھوٹی اور ایشیا کا سب سے چھوٹا ملک ہے۔رپورٹ میں عالمی مالیاتی ادارے (آئی ایم ایف)کے اعداد و شمار کا حوالہ دیتے ہوئے کہا گیا ہے فروری میں پاکستان کے زرمبادلہ کے ذخائر کم ہو کر 13 ارب 50 کروڑ ڈالر رہ گئے جبکہ جنوری میں کمبوڈیا کے زرمبادلہ کے ذخائر 11 ارب 20 کروڑ ڈالر تھے۔ انسائٹ سیکیورٹیز پرائیوٹ کے مطابق جون تک پاکستان کے زرمبادلہ کے ذخائر مزید 2 ارب 20 کروڑ ڈالر کم ہونے کا خدشہ ہے۔ پاکستان کو اس وقت ادائیگیوں کے توازن کے بحران کا سامنا ہے۔رپورٹ میں کہا گیا ہے گزشتہ آٹھ ماہ میں پاکستان کا کرنٹ اکاونٹ خسارا بڑھ کر 10 ارب 80 کروڑ ڈالر رہا جس کی بڑی وجہ بڑھتی ہوئی درآمدات ہیں جبکہ زرمبادلہ کے ذخائر پر دباو کے باعث انتظامیہ نے چار ماہ کے دوران دوسری بار روپے کی قدر میں کمی کر دی۔ 1971 میں پاکستان سے الگ ہونے والے بنگلہ دیش کے زرمبادلہ کے ذخائر بھی پاکستان سے دو گنا سے زائد ہیں جبکہ اس کی برآمدات بھی پاکستان سے زیادہ ہیں۔بلوم برگ کے مطابق نیوزی لینڈ اور قازقستان بھی ان ایشیا پیسیفک ممالک میں شامل ہیں جن کی معیشت پاکستان سے چھوٹی لیکن زرمبادلہ کے ذخائر اس سے زیادہ ہیں۔