ذوالفقار علی بھٹو کے قاتل ضیاء کو علامتی پھانسی دی جائے : مظفر برلاس

30 مارچ 2018

کراچی(اسٹاف رپورٹر) شہید ذوالفقار علی بھٹو تحریک کے مرکزی چیئرمین مظفر برلاس ایڈووکیٹ نے سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ 1977 میں وزیراعظم ذوالفقار علی بھٹو کی حکومت اور اپوزیشن پر مشتمل ’’پی این اے‘‘ کے درمیان مذاکرات کے نتیجہ میں یہ سمجھوتہ طے پا گیا تھا کہ انتخابات دوبارہ کروا دیئے جائیں گے لیکن رات کی تاریکی میں جنرل ضیاء نے مارشل لاء لگا کر وزیراعظم ذوالفقار علی بھٹو کی منتخب جمہوری حکومت ختم کردی اورمتفقہ آئین توڑا‘ اس جرم کی سزا آئین کے آرٹیکل 6کے تحت سزائے موت ہے ۔جنرل ضیاء نے پاکستان کے پہلے منتخب وزیراعظم اورپاک فوج کے سپریم کمانڈر ذوالفقار علی بھٹو کو پھانسی دے کر ملک وقوم کو ناقابل تلافی نقصان پہنچایا مظفر برلاس نے کہا ہے کہ ذوالفقار علی بھٹو کے قاتل ضیاء کو علامتی پھانسی دی جائے۔ مرکزی صدر محترمہ مسرت رونی نے کہا کہ پھانسی سے پہلے ذوالفقار علی بھٹو کو 2سال تک قید تنہائی میں رکھا گیا۔