جامعہ کراچی کے لئے ایک ارب 80 کروڑ روپے کی منظوری

30 مارچ 2018

کراچی(نیوز رپورٹر)سی ڈی ڈبلیو پی ،پلاننگ کمیشن اسلام آباد کے حالیہ اجلاس میں جامعہ کراچی کے لئے تقریباًایک ارب 80 کروڑ روپے کے خطیر فنڈ کی منظوری دے دی گئی ہے۔مذکورہ اجلاس ڈپٹی چیئر مین پلاننگ کمیشن سرتاج عزیز کی زیر صدارت منعقد ہوا جس میں جامعہ کراچی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر محمد اجمل خان نے پہلے سے جمع شدہ پی سی ون منصوبے پر ممبران کو تفصیلی بریفنگ دی ۔واضح رہے کہ مذکورہ پی سی ون منصوبے پر شیخ الجامعہ ڈاکٹر محمد اجمل خان نے اپنا عہدہ سنبھالتے ہی کام شروع کیا اور ایک سال کے قلیل عرصے میں نہ صرف جمع کرایا بلکہ اب یہ منصوبہ کامیابی سے منظور ہوچکاہے جو ان کے دور اندیش وژن اور جامعہ دوست پالیسیوں کا ثمر ہے۔مذکورہ گرانٹ جامعہ کراچی میں تدریسی اور تحقیقی سرگرمیوں کے فروغ کے لئے مختص کی گئی ہے ۔اس موقع پر شیخ الجامعہ پروفیسر ڈاکٹر محمد اجمل خان نے ڈپٹی چیئر مین پلاننگ کمیشن سرتاج عزیز،چیئر مین ہائرایجوکیشن کمیشن ڈاکٹر مختار احمداورسیکریٹری پلاننگ ڈیولپمنٹ اینڈ ریفارم شعیب احمد صدیقی کا بیحد شکریہ اداکیا اور ان کی تعلیم دوست پالیسیوں کو خراج تحسین پیش کیا۔اجلاس میں پیش کردہ بریفینگ کے مطابق مذکورہ فنڈ ز سے جامعہ میں تحقیقی سہولیات میں بہتری ،کلیہ سماجی علوم اور کلیہ علوم کے لئے نئے بلاکس کی تعمیر ، سینٹر فارڈیجیٹل فارنسک سائنس اینڈ ٹیکنالوجی جامعہ کراچی اورشعبہ ویژول اسٹڈیز کے نئے بلاک کی تعمیربشمول تمام سہولیات،جمنازیم اور شعبہ بائیوٹیکنالوجی کی تزئین وآرائش،جامعہ کراچی کے طلبہ کے لئے 10 نئی بسیں ،مین کمیونیکشن نیٹ ورک کی مزید بہتری ،نیشنل سینٹر فارپروٹیومکس کی سماعت گاہ کی تعمیر کی تکمیل،200 طالبات کے لئے گرلز ہاسٹل کے نئے بلاک کی تعمیرکے منصوبے شامل ہیں ۔ڈاکٹر اجمل خان نے مزید کہا کہ جامعہ کراچی کی ترقی میری اولین ترجیح رہی ہے اور محض ایک سال کے قلیل عرصے میں جامعہ کراچی کی تعلیمی وتحقیقی صلاحیتوں میں بہتری آئی ہے ۔فنڈز کا مسئلہ حل ہوجائے تو وہ وقت دور نہیں کہ جامعہ کراچی کا شمار نہ صرف پاکستان بلکہ دنیا بھر کی صف اول کی جامعات میں ہوگا۔جامعہ کراچی میں انتہائی قابل اساتذہ موجود ہیں جو تدریسی وتحقیقی صلاحیتوں میں اپنا ثانی نہیں رکھتے۔