پاکستانی ڈراموں کا معیار ؟

30 مارچ 2018

مکرمی! پیمرا کی جانب سے نوٹیفکیشن جاری کیا گیا تھا کہ کوئی چینل ویلینٹائن ڈے پر مبنی پروگرام نشر نہ کرے یہ ایک قابل ستائش بات تھی میری پیمبرا کے حکام سے گزارش ہے کیبلز کے آپریٹرز اور ٹی وی چینلز کو پابند کیا جائے کہ وہ ہندو کلچر اور ہندوانہ اقدار پر مبنی پروگرامز نشر نہ کرے ۔یہ بات حد درجے افسوسناک ہے کہ انڈین چینلز پر پابندی کے بعد انڈین ڈرامے اور کارٹونز دکھائے جارہے ہیں یہی چینلز اگر قومی سوچ اسلامی اقدار اور روایات کو لے کر پروموٹ کریں تو یقیناً یہ ہمارے معاشرے کے لےے زیادہ سود مند ثابت ہوں گے ہم اپنی بنیاد سے جس قدر قریب ہونگے اپنی تاریخ کو جس قدر زیادہ پہچانیں گے بحیثیت ایک مسلمان قوم ہماری نسلوں کے اعتماد اور یقین کو استحکام نصیب ہوگا جو روز بروز کمزور ہونے کے باعث معاشرہ ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہے اور دشمن عناصر کو کھل کر کھیلنے کا موقع مل رہا ہے قائداعظم کے تین نکات تنظیم،اتحاد،ایمان ہی ہماری ترقی کے ضامن ہیں۔
(مہناز فاطمہ،واہ کینٹ )