بھارت: سیلاب نے تباہی مچا دی، کئی دیہات صفحہ ہستی سے مٹ گئے

30 جون 2013

 نئی دہلی(اے پی اے ) بھارت کی شمالی ہمالیائی ریاست اتر کھنڈ میں آنے والے سیلاب کے دو ہفتے بعد بھی متاثرہ علاقوں میں امدادی کاروائیاں جاری ¾ اب بھی ایک ہزار سے زائد افراد لاپتہ ہیں۔بھارتی حکومت کے مطابق  مون سون کی قبل از وقت بارشوں کے نتیجے میں آنے والے سیلاب اور لینڈ سلائیڈنگ کے باعث ہونے والی ہلاکتوں کی تعداد 600 ہوگئی ہے۔علاقے کے کئی دیہات صفحہ ہستی سے مٹ گئے ہیں جب کہ کئی سڑکیں اور رابطہ پل یا تو سیلابی ریلے اپنے ساتھ بہا لے گئے ہیں یا پھر وہ مٹی کے تود وں تلے دبے ہوئے ہیں۔ حکام کے مطابق سڑکیں اور رابطہ پل ٹوٹنے کے باعث پہاڑوں میں گھرے ریاست کے کئی دیہات کا بیرونی دنیا سے رابطہ منقطع ہے اور وہاں اب تک امداد نہیں پہنچائی جا سکی۔ عالمی امدادی اداروں نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ سیلاب سے ہونے والی تباہی اندازوں سے کہیں زیادہ ہے اور مواصلاتی رابطے بحال ہونے اور متاثرہ علاقوں تک امدادی کارکنوں کو رسائی ملنے کے بعد صحیح صورتِ حال سامنے آسکے گی۔