منظور وٹو کی ذاتی خواہشات اتنی زیادہ تھیں کہ ہم پوری نہیں کر سکتے تھے: صدر آزادکشمیر

30 جون 2013

اسلام آباد (ثناءنیوز) صدر آزاد کشمیر سردار یعقوب خان نے کہا ہے کہ مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اقوام متحدہ کی قرار دادیں ہی اصل بنیاد ہیں اس کے بعد ہی خود مختاری یا الحاق پاکستان یا بھارت پر بات ہو سکتی ہے ۔ یہ درست ہے کہ آزاد کشمیر کو پاکستان کی وزارت امور کشمیر چلاتی ہے کشمیر کونسل کی آزاد کشمیر میں بہت زیادہ مداخلت ہے جو ہمارے لئے بہت تکلیف دہ بات ہے وزیر امور کشمیر میاں منظور وٹو کی ذاتی خواہشات اور ضرورتیں اتنی زیادہ تھیں کہ ہم پوری نہیں کر سکتے تھے ۔ اس کی شکایت میں نے صدر زرداری اور وزیار اعظم سے بھی کی ۔ ایک نجی ٹی وی کے پروگرام میں اظہار خیال کرتے ہوئے صدر آزاد کشمیر نے کہا کہ مجھے صدر کا عہدہ زیادہ پرکشش لگا ہے میں وزیر اور وزیر اعظم بھی رہا ہوں مگر جو مزا عہدہ صدارت میں ہے وہ کہیں نہیں میں انتہائی مسکین اور بے اختیار صدر ہوں میں نے غربت کے انتہائی بدترین دن دیکھے ہیں زندگی میں بہت زیادہ مزدوری کی ہے حتیٰ کہ اخبار تک بیچے ہیں مگر سوچ ہمیشہ اعلی رکھی ہے جب کبھی بڑا آدمی بننے کی بات کرتا تو لوگ مجھے چیخ چلی کہتے اللہ کا بڑا شکر ہے کہ اس نے میری یہ خواہش پوری کی ہے۔