انٹیلی جنس اداروں کی معلومات سے دہشت گردی کا خاتمہ کیا جائیگا: آئی جی پنجاب

30 جون 2013

لاہور (نامہ نگار) صوبے میںامن وامان کی بحالی، عوام کے جان ومال کا تحفظ، بروقت انصاف کی فراہمی، جرائم میں کمی اور دہشت گردی کا خاتمہ میری اولین ترجیحات ہیں اور ایک جامع حکمت عملی کے تحت ان ترجیحات پر عملدرآمد کو یقینی بنایا جائیگا جبکہ انٹیلی جنس اداروں کے ساتھ مستقل رابطے ، تعاون اور ان کی طرف سے فراہم کردہ اطلاعات پر زیادہ سے زیادہ انحصار کرتے ہوئے صوبے سے دہشت گردی کا خاتمہ کیا جائے گا ۔ان خیالات کا اظہار انسپکٹر جنرل پولیس پنجاب خان بیگ نے اپنی مستقل تعیناتی کے بعدگزشتہ روز میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔خان بیگ نے کہا کہ صوبے میں جرائم پیشہ افراد کیخلاف گھیرا تنگ کردیا جائے گا اور محکمے میں کرائم فائٹر افسروں اور اہلکاروں کو آگے لایا جائے گا۔ آئی جی پنجاب نے مزید کہا کہ ڈکیتی ، چوری، سٹریٹ کرائم ، اغواءبرائے تاوان اور قتل جیسی گھناﺅنی وارداتوں میں ملوث ملزمان سے نمٹنے کیلئے فیلڈ پولیس افسران کو مزید متحرک کیا جائے گا ۔آئی جی پنجاب نے کہا کہ محکمے میں شفافیت اور میرٹ کو ترجیح دی جائے گی۔علاوہ ازےں آئی جی پنجاب کی سی پی او آمد کے موقع پر پولیس کے اےک دستے نے انہےں سلامی پیش کی۔انہوں نے کہا کہ ایسا تھانہ کلچر متعارف کرائیں گے جس سے عوام کا پولیس پر اعتماد قائم ہو اور ہر شہری بآسانی پولیس کو اپنا موقف بیان کرسکے،محکمے میں احتساب کے نظام کو پہلے سے بہتر بنایاجائیگا۔