سندھ اسملبی کا اجلاس سپیکر حاضر،ارکان غائب،،شورشرابے سے بھرپوررہنے والی اسمبلی میں آج ہو کاعالم تھا

30 جنوری 2015 (14:28)

قومی اورصوبائی اسمبلیوں کے اجلاس میں شرکت کرنا شاید  عوامی نمائندے اپنی توہین سمبجھتے ہیں،ایسا ہی کچھ ہواجمعے کے روز،جہاں روزانہ تاخیر سے سے شروع ہونے والا سندھ اسمبلی کا اجلاس شروع  ہوتے ہی ملتوی کردیا گیا،سندھ اسمبلی کااجلاس سپیکرآغا سراج درانی کی زیرصدارت شروع ہواتو ایوان میں موجود تھے صرف تین ارکان،،جس پرسپیکر نے اجلاس بغیرکسی کارروائی کے کورم پورا نہ ہونے پر سوموار تک ملتوی کردیااسملبی کے باہرمیڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ایم کیوایم کے رہنماؤں کا کہنا تھا کہ اجلاس  ملتوی کرنا غلط ہے،،خواجہ اظہارالحسن نے کہا کہ حکومت نے راہ فرار اختیار کی ہےخواجہ اظہارالحسنسید سرداراحمد کا کہنا تھا کہ  وزیراعلیٰ  نے ایوان میں جو الفاظ استعمال کیے تھےاسکےخلاف دو تحریکیں جمع کرائی تھی،حکومت نے غیرقانونی طورپراجلاس ملتوی کیاسید سردار احمداسملبی کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے نثار کھوڑو کا کہناتھا کہ  اپوزیشن کی تنقید بلاجواز ہے،اجلاس ملتوی کرنا سپیکر کی صوابدید ہے