افغانستان: جنازے پر خودکش دھماکہ‘ طالبان سے جھڑپ‘ 34 افراد ہلاک

30 جنوری 2015

کابل (اے ایف پی+رائٹرز+نیوز ایجنسیاں) افغانستان میں ایک جنازے پر خودکش دھماکے، چیک پوسٹ پر حملے، جھڑپوں میں 4 پولیس اہلکاروں سمیت 34 افراد ہلاک، 39 زخمی ہو گئے۔  سکیورٹی حکام نے بتایا صوبہ لغمان کے علاقے مہترلم میں دھماکہ ہوا۔ بم دھماکے میں ہلاک شخص کے رشتہ دار اور دیگر افراد میت کو تدفین کیلئے لے کر جا رہے تھے، راستے میں ایک خودکش بمبار نے شرکاء میں شامل ہو کر خود کو اڑا لیا۔ زخمیوں کو ہسپتال منتقل کر دیا گیا، کسی گروپ نے ذمہ داری قبول نہیں کی۔ ادھر طالبان کے چیک پوائنٹ پر حملے اور جھڑپ میں 11 افراد، 7 طالبان مارے گئے۔ لغمان میں ہلاک ہونے والوں میں 12 شہری اور 4 پولیس اہلکار شامل ہیں۔ سکیورٹی فورسز نے ایک خودکش بمبار کو گرفتار کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔ پولیس افسر نے کہا خودکش حملے میں طالبان ملوث ہیں۔ آئی این پی کے مطابق پاک افغان سرحدی علاقے میں امریکی ڈرون حملے کے نتیجے میں 4 دہشت گرد ہلاک ہوگئے۔جمعرات کو غیر ملکی خبرایجنسی کے مطابق انٹیلی جنس ذرائع  نے بتایا کہ  یہ ڈرون حملہ افغانستان کے ضلع نازان میں کیا گیا جس کے دوران ڈرون نے تین میزائل داغے۔ حملے میں متعدد  زخمی ہونے کی بھی اطلاعات ہیں۔ رپورٹ کے مطابق تاحال ہلاک ہونے والے عسکریت پسندوں کی شناخت نہیں ہوسکتی۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق اس علاقے میں کالعدم تحریک طالبان پاکستان اور چند غیر ملکی جنگجو مقیم ہیں۔ خیبر ایجنسی کی تحصیل لنڈی کوتل کے پاکستان بارڈر پر افغانستان کے علاقہ میں زرق نامی مورچہ پر نامعلوم شدت پسندوں نے حملہ کیا جس کے نتیجے میں مورچہ میں موجود 5افغانی اہلکار جاں بحق ہو ئے جبکہ جوابی کارروائی سے 2شدت پسند مارے گئے اور تین زخمی ہوئے۔مرنے والوں میں شدت پسندعثمان،محمد ولی شامل ہیں۔